site
stats
پاکستان

وزیراعظم کواستعفیٰ دینا ہوگا، اپوزیشن جماعتوں کا مشترکہ کا مطالبہ

اسلام آباد: :اپوزیشن رہنماؤں کا کہنا ہے کہ وزیراعظم مستعفی ہوں، سپریم کورٹ کے ساتھ کھڑے ہیں فیصلے کا احترام کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق خورشیدشاہ کی زیرصدارت اپوزیشن رہنماؤں کا اجلاس ہوا، جس میں اپوزیشن ارکان نے وزیر اعظم سے استعفی سے متعلق حکمت عملی پر غور کیا گیا، اجلاس میں اپوزیشن رہنماؤں نے مشترکہ مطالبہ کیا کہ وزیراعظم کو استعفیٰ دینا ہوگا جبکہ پیر کو سینیٹ میں وزیراعظم نواز شریف کے استعفیٰ کی قرارداد منظور کرانے پر بھی اتفاق کیا گیا۔

اے این پی اور قومی وطن پارٹی کے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ عدالتی فیصلے پر وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ کرینگے جبکہ قومی اسمبلی کا اجلاس طلب کرنے سے متعلق تمام اختیار اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ کو دیدیا۔

اجلاس میں شاہ محمود قریشی ، سراج الحق، شیخ رشید ، پرویز الہی، آفتاب شیر پاؤ،طارق بشیر چیمہ، شیری رحمان سمیت ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار بھی شریک تھے۔

میاں صاحب جھوٹ بولنےوالاصادق اورامین نہیں رہتا، خورشیدشاہ

اجلاس کے بعد اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میاں صاحب جھوٹ بولنے والاصادق اور امین نہیں رہتا، جےآئی ٹی کی رپورٹ سب کے سامنے ہے، حالات انتہائی سنجیدہ ہیں، بھارت نوازشریف سے متعلق پریشان ہے، بھارت پریشان ہے کہ نوازشریف کیخلاف سب کچھ ثبوت کیساتھ آیا۔

خورشیدشاہ نے کہا کہ حکومت نے جے آئی ٹی اور پھر رپورٹ کو بھی متنازع بنانے کی کوشش کی، وزیراعظم نے خود کہا تھا کہ استعفیٰ دے دوں گا، وزیراعظم نے وعدہ خلافی کرتے ہوئے مستعفی نہ ہونے کا اعلان کر رہےہیں، اپوزیشن چاہتی ہے اسمبلیاں تحلیل نہ ہوں، سب کی خواہش ہے حکومت اپنی مدت پوری کرے۔

فیصلہ جو بھی ہو ہم سپریم کورٹ کا بھرپور ساتھ دیں گے، شاہ محمود قریشی

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمودقریشی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ فیصلہ جو بھی ہو ہم سپریم کورٹ کا بھرپور ساتھ دیں گے، جےآئی ٹی کو انکشافات پیش کرنے پر خراج تحسین پیش کرتے ہیں، آئین اورجمہوریت کیساتھ ہے، سسٹم کو ڈی ریل کرنا مقصد نہیں، وزیراعظم نوازشریف کے استعفے کیلئے پوری اپوزیشن متحد ہے۔

شاہ محمودقریشی نے کہا کہ ہماری لڑائی کسی جماعت سے نہیں،نوازشریف مستعفی ہوں، مسلم لیگ ن کےاندر سے بھی آوازیں اٹھ رہی ہیں کہ استعفیٰ دو۔

وزیراعظم نوازشریف سنگینی کو سمجھیں اور عہدے کو چھوڑدیں، سراج الحق

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے بھی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جےآئی ٹی نے پوسٹ مارٹم کیا کرپشن کی رپورٹ مثبت ہے،مریض مستعفی ہو، جمہوریت کے ساتھ ہیں،احتساب اور جمہوریت ساتھ چلیں گے، وزیراعظم نوازشریف سنگینی کو سمجھیں اور عہدے کو چھوڑدیں۔


وزیراعظم نوازشریف کا مستعفی نہ ہونےکادوٹوک اعلان


یاد رہے کہ گزشتہ روزوزیراعظم کی زیر صدارت کابینہ کے اجلاس میں وزیر اعظم کی جانب سے استعفی نہ دینے کا فیصلہ کیا گیاتھا،وزیراعظم نوازشریف کے اس فیصلے پر وفاقی کابینہ نے بھی مکمل اعتماد کا اظہارکیا تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top