The news is by your side.

Advertisement

خود کو امریکا کا پرانا دوست سمجھتے ہیں، خواجہ آصف

واشنگٹن : وزیرخارجہ خواجہ آصف نے کہا ہے کہ دہشت گردی کیخلاف جنگ میں اپناکردارادا کرتے رہیں گے، پاکستان نے القاعدہ کیخلاف جنگ میں اہم کردار ادا کیا، خود کو امریکا کاپرانا دوست سمجھتے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے امریکی ادارہ برائے امن میں خطاب کرتے ہوئے کیا، وزیرخارجہ خواجہ آصف نے کہا کہ گزشتہ چار سال میں پاکستان کا نقشہ ہی تبدیل ہوگیا ہے، معاشی صورتحال بہترہوئی ہے اورہم ترقی کی جانب گامزن ہیں۔

افغانستان میں 16 سال کی جنگ کا بوجھ نئی حکومت کو اٹھانا پڑرہا ہے، افغانستان میں امن واستحکام کےخواہاں ہیں، خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے جنوبی ایشیاء کیلئے نئی پالیسی کا اعلان کیا ہے، ٹرمپ نے کہا ہے کہ امریکا کےساتھ کام کرنا پاکستان کے مفاد میں ہے۔

واشنگٹن میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ آصف نے پاکستان پرامریکی الزامات مسترد کرتے ہوئے کہا کہ امریکا پناہ گاہوں کے ثبوت دے کارروائی ہم کرینگے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان میں ہونیوالی دہشتگردی کی کارروائیوں میں بھارت ملوث ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکی صدر کے بیان سے اتفاق کرتے ہیں کہ ہم امریکا کے پرانےدوست ہیں، ہم بھی خود کو امریکا کا پرانا دوست سمجھتے ہیں، پاکستان نے دہشت گردی کیخلاف جنگ میں بہت قربانیاں دی ہیں،اب تک لاکھوں افراد عالمی دہشت گردی سے متاثر ہوئے ہیں۔

نائن الیون کے بعد ہم نے القاعدہ کیخلاف جنگ میں اہم کردار ادا کیا تھا، اور آئندہ بھی اس جنگ میں اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے۔


مزید پڑھیں: پاکستان میں استحکام دیکھنا چاہتےہیں، امریکی وزیرخارجہ


وزیرخارجہ نے کہا کہ پاکستان صرف لڑ نہیں رہا یہ جنگ جیت بھی رہا ہے، ہم شکایت نہیں کررہے کہ ہم دہشت گردی کیخلاف لڑ رہے ہیں، گزشتہ چارسال سے یہ بات واضح ہوچکی ہے کہ ہم دہشت گردی کیخلاف جنگ میں جیت رہےہیں۔

پاکستان میں سیکیورٹی صورتحال میں بہتری سے معیشت بہترہوئی، پاکستان امریکا کےساتھ مشترکہ اہداف کیلئے مل کرکام کرنا چاہتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں