The news is by your side.

Advertisement

گھر ٹھیک کرنے سے مراد نیشنل ایکشن پلان پر کماحقہ عمل نہ ہونا ہے، خواجہ آصف

اسلام آباد : وفاقی وزیرخارجہ خواجہ آصف نے کہا ہے کہ گھر ٹھیک کرنے کے بیان پراب بھی قائم ہوں اور اس سے مراد نیشنل ایکشن پلان پر مکمل عمل درآمد نہ ہونا ہے.

اپنے پرانے بیان کا اعادہ انہوں نے اپنے تازہ انٹریو میں کیا، وفاقی وزیر خواجہ آصف نے کہا کہ آڈیو اور ویڈیو کلپ کے جوڑ سے کہنے والے کا مطلب بدل جاتا ہے اس لیے کسی بھی قسم کے تبصرے سے قبل تصدیق کرلینا چاہیئے.

انہوں نے کہا کہ گھر میں پچھلے 40 سال سے جو گند پڑا ہے اسے صاف کرنا ہے تاہم امریکا کو بھی باور کرادیا ہے کہ اس سے دوستی گھاٹے کا سودا رہا ہے اس لیے اب اگرامریکا تعلقات چاہتا ہے تو ایک دوسرے کی عزت کرنی ہوگی اور برابری کی بنیاد پر استوار ہونے چاہیئے

خواجہ آصف نے امریکی تعلقات پر نات کرتے ہوئے مزید کہا کہ خطے میں اپنی پوزیشن کے لیے امریکی ریفرنس کی ضرورت نہیں ہے، ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے پناہ قربانیاں دی ہیں جسے امریکا کو سراہنا چاہیئے تب ہی بہتر تعلقات استوار ہو سکتے ہیں.

 اسی سے متعلق : وزیراعظم اور وزیر خارجہ پہلے اپنے گھروں کی صفائی کریں، عمران خان

ایک سوال کے جواب میں وزیرخارجہ خواجہ آصف نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کا اقلیتوں اور ختم نبوت سے متعلق موقف واضح اور متزلزل ہے چنانچہ کیپٹن (ر) صفدر کے قومی اسمبلی میں دیئے گئے بیان کوسپورٹ نہیں کرتے اور پارٹی کو کیپٹن (ر) صفدر کے حساس بیان پر ایکشن لینے کے لیے کہا ہے.

 یہ بھی پڑھیں : وزیراعظم اپنے بیان سے دنیا بھرمیں پاکستان کا تماشا نہ بنائیں، چوہدری نثار

ٹیکنو کریٹ حکومت کی بازگشت پر سابق وزیراعظم نواز شریف کے معتمد ساتھی خواجہ آصف نے کہا کہ ٹیکنو کریٹ حکومت کے حامی 12 ویں کھلاڑی ہیں جو ہمیشہ اس انتظار میں رہتے ہیں کہ کوئی حادثہ ہو اور انہیں اقتدار میں آنے کا موقع ملے چاہے چور دروازہ ہی کیوں نہ استعمال کرنا پڑے.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں