site
stats
پاکستان

پولیس اہلکاروں کی مبینہ زیادتی کے خلاف خواجہ سرا کی عدالت میں عرضی

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے خواجہ سراء سے مبینہ زیادتی کرنے والے پولیس اہلکاروں کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست نمٹا کرخواجہ سرا کو متعلقہ فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کردی۔

تفصیلات کے مطابق لاہورہائیکورٹ کے جسٹس عبدالسمیع خان نے کیس کی سماعت کی،عدالت کو درخواست گزارخواجہ سراء ریشم نے بتایا کہ تھانہ نصیر آباد کے اہلکاروں نے اسےغیرقانونی طورپر حراست میں لے کرتھانے لے جا کر پیسے چھین لیے اور مزاحمت کرنے پرمجھے زیادتی کا نشانہ بنایا۔

خواجہ سرا ریشم نے عدالت کے سامنے اپنے بیان میں مزید بتایا کہ پولیس اہلکاروں کے خلاف ایف آئی آر کا اندارج کروانا چاہا لیکن پولیس اہلکاراپنے پیٹی بند بھائیوں کو بچانے کے لئے مقدمہ درج نہیں کر رہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں :  فائرنگ سے 2 خواجہ سرا جاں بحق،3 زخمی

جس پر سرکاری وکیل نے موقف اختیار کیا کہ درخواست گزارنے جسٹس آف پیس سے رجوع نہیں کیا لہذا ہائی کورٹ میں درج کرائی گئی یہ درخواست ناقابل سماعت ہے متاثرہ خواجہ سرا کو قانونی طور پر پہلے جسٹس آف پیس سے رجوع کرنا چاہیے تھا۔

دو طرفہ دلائل سننے کے بعد لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس عبدالسمیع نے درخواست گزار خواجہ سرا ریشم کو متعلقہ فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے درخواست نمٹا دی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top