The news is by your side.

Advertisement

بھارت کی غلط فہمی کا بھرپور جواب دے سکتے ہیں، پاکستان

اسلام آباد: وفاقی وزیر خارجہ خواجہ آصف نے کہا ہے کہ بھارتی آرمی چیف کا بیان غیر ذمہ دارانہ ہے، بھارت جوہری جنگ چاہتا ہے تو ہم اُس کا شک اچھے طریقے سے دور کرسکتے ہیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ردعمل دیتے ہوئے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ ’بھارتی آرمی چیف کا بیان جوہری جنگ کو دعوت دینے کے مترادف ہے، اگر بھارت جوہری جنگ چاہتا ہے تو شوق سے ہمارے حوصلے کا امتحان لے‘۔

خواجہ آصف نے کہا کہ ’ہم انشاء اللہ بھارت کے جنگی شوق کا شک دور کردیں گے‘۔

وفاقی وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارتی آرمی چیف  کابیان غیرذمہ دارانہ ہے اور انہیں ایسا بیان زیب نہیں دیتا باقی اگر کسی کو پھر بھی جنگ کا شوق ہے تو ہم تیار ہیں۔

بھارتی آرمی چیف کا بیان شیطانی ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے، ترجمان دفتر خارجہ

دوسری جانب دفتر خارجہ نے بھارتی آرمی چیف کے غیر ذمہ دارانہ اور دھمکی آمیز قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ’ایسے معاملات کو نظر انداز نہیں کرسکتے، بھارتی آرمی چیف کا بیان شیطانی ذہنیت کی عکاسی کرتا اور اسی نے پورے بھارت کو اپنے شکنجے میں لیا ہوا ہے‘۔

ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ ’پاکستان اپنے دفاع کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے، اس لیے خطے میں توازن برقرار رکھنے کے لیے ہمیشہ اپنی صلاحیتوں کا  مظاہرہ کیا مگر بھارت غلط اندازوں اور مہم جوئی سے باز رہے‘۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا رد عمل

قبل ازیں پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے بھارتی آرمی چیف کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ ’بھارت کسی غلط فہمی میں نہیں رہے، پاک فوج انتہائی پیشہ ور ادارہ ہے‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ قابل اعتمادجوہری صلاحیت مشرقی خطرات سےنمٹنےکے لیے ہے، جوہری ہتھیار جنگ  روکنےکیلئےہیں،خواہش اسے کسے کے لیے استعمال  نہ کریں ، ہمارے جوہری ہتھیاروں نے بھارت کو روکا ہوا ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ پاک بھارت روایتی جنگ ممکن نہیں رہی یہی وجہ ہے بھارت پاکستان کے خلاف پس پردہ جنگ لڑنے کی کوشش کررہا ہے مگر اب تک اُسے کے تمام ہتھکنڈے ناکام رہے‘۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھارتی آرمی چیف نے پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کارروائی کی دھمکی دی تھی۔


Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں