The news is by your side.

Advertisement

گردہ اسکینڈل کیس: گروہ کے تین مرکزی ملزمان گرفتار

لاہور : پنجاب میں گردوں کی غیرقانونی پیوند کاری کا دھندا چلانے والے گروہ کے تین مرکزی کردار مری کے ہوٹل سے گرفتار ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق گردہ اسکینڈل کیس میں نئی پیشرفت سامنے آئی ہے، ایف آئی اے کی ٹیم کو کیس میں بڑی کامیابی مل گئی، پنجاب میں گردہ اسکینڈل کے مرکزی کردار ڈاکٹر ثاقب خان سمیت مزید تین ملزمان کو گرفتارکرلیاگیا۔ ڈاکٹر ثاقب سے تفتیش میں سنسنی خیز انکشافات متوقع ہیں۔

ایف آئی اے نے مری کے ایک ہوٹل میں کامیاب کارروائی کرتے ہوئے گروہ کے سرغنہ ڈاکٹر ثاقب سمیت اس کے سہولت کار قمر اور خاتون فضائل کو حراست میں لے لیا، ایف آئی اے کے مطابق ملزمان فرار ہو کر پہلے چترال اور فیصل آباد گئے پھر وہاں سے مری پہنچے تھے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل گوجرانوالا سے گروہ کے ایک ایجنٹ عبدالمجید کو گرفتار کیا گیاتھا جو غیرملکی افراد کو ڈاکٹر فواد اور ڈاکٹر التمش تک پہنچاتا تھا۔

مزید پڑھیں : اٹھارہ لاکھ کے عوض گردہ ٹرانسپلانٹ کیا جاتا تھا، گرفتار ملازمہ

یاد رہے کہ ملزمان ڈاکٹرفواد، وائی ڈی اے کے سیکرٹری ڈاکٹر التمش اور شریف میڈیکل سٹی کی ہیلتھ ورکرصفیہ کو پہلے ہی گرفتارکیاجاچکاہے۔

ملزمہ صفیہ نے دوران تفتیش انکشاف کیا تھا کہ بشیرنامی شخص اسے ڈونر فراہم کرتا تھا۔ گردہ ٹرانسپلانٹ کروانے والے سے اٹھارہ لاکھ روپے لیے جاتے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں