The news is by your side.

ٹیلی کام کمپنی کے ملازمین کو تشدد کر کے قتل کرنے کا مقدمہ درج

کراچی: مچھر کالونی میں ٹیلی کام کمپنی کے ملازمین کو تشدد کر کے قتل کرنے کا مقدمہ درج کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پولیس نے ڈاکس کالونی تھانے میں مقتول اسحاق کے چچا کی مدعیت میں قتل، دہشت گردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا۔

مقدمے میں 15 ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے، جن میں محمد حسین، عثمان، مالک، رحمت، مصطفیٰ، رشید بنگالی، عبدالغفور، نور افسر، ربیع السلام، محمد فاروق، فیصل، عرفان، شہزاد، رزاق عرف کالو اور ایم رفیق شامل ہیں۔

محکمہ پولیس کے مطابق مقدمے میں 200 سے 250 نامعلوم افراد کو بھی شامل کیا گیا۔

مقدمے میں لکھا گیا ہے کہ اسحاق اپنے انجینئر ایمن جاوید کے ساتھ سگنل ٹیسٹنگ کے لیے مچھر کالونی آیا، دونوں افراد کو 200 سے 250 افراد نے پتھروں، ڈنڈوں اور بلاکس سے تشدد کر کے قتل کیا، مقتولین کے زیر استعمال گاڑی کو توڑ پھوڑ کر کے مشتعل افراد نے آگ لگا دی۔

ڈاکو کے شبے میں شہریوں کے تشدد سے 2 افراد کا بہیمانہ قتل: عینی شاہد نے انکھوں دیکھا حال بتادیا

ایس ایس پی کیماڑی فدا حسین جاںوری نے بتایا کہ پولیس اور رینجرز نے رات بھر مچھر کالونی اور اطرف سرچ آپریشن کر کے 34 مشکوک افراد کو حراست میں لے کر تھانے منتقل کر دیا، زیر حراست مشکوک افراد میں سے مزید 3 ملزمان کی شناخت کر لی گئی ہے، واقعے میں ملوث گرفتار ملزمان کی تعداد 6 ہو گئی۔

انھوں نے بتایا کہ واقعے کے بعد پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے 16 مشکوک افراد کو حراست میں لیا تھا، زیر حراست افراد میں مسجد کے مہتمم سمیت 3 ملزمان کو گزشتہ روز ہی گرفتار کر لیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں