The news is by your side.

Advertisement

لاہور : دو بچوں کی مبینہ قاتل سوتیلی ماں کی ضمانت میں توسیع

لاہور : سوتیلی ماں کا دو بچوں کو کرنٹ لگا کر قتل کرنے کا معاملے پر اہم پیش رفت ہوئی ہے، عدالت سے ملزمہ کی عبوری ضمانت میں توسیع کردی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کی سیشن کورٹ میں ملزمہ انیلہ سوتیلی ماں کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی، عدالت نے29جولائی تک ملزمہ کی عبوری ضمانت میں توسیع کردی۔

سماعت کے دوران جج نے تفتیشی افسر کو تحقیقاتی رپورٹ جلد پیش کرنے کا حکم دے دیا، عدالت نے ملزمہ کو شامل تفتیش ہونے کا حکم دیتے ہوئے سماعت اگلی پیشی تک ملتوی کردی۔

خاتون ملزمہ کے خلاف 2سوتیلے بچوں کو کرنٹ لگا کر قتل کرنے کا مقدمہ درج کیا گیا ہے، پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ ملزمہ بچوں کو قتل کرنے کے بعد گھر کو بند کر کے بھاگ گئی تھی۔

عدالت کو بیان دیتے ہوئے خاتون نے مؤقف اختیار کیا کہ میں بے قصور ہوں میں نے بچوں کو قتل نہیں کیا ملزمہ نے استدعا کی کہ عدالت میری درخواست ضمانت منظور کرے۔

اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ دو معصوم بچوں کے قتل کا افسوسناک واقعہ رائیونڈ کے گاؤں بابلیانہ اوتارڈ میں رواں سال ماہ جنوری میں پیش آیا تھا۔

یاد رہے کہ رواں سال جنوری میں رائیونڈ میں سوتیلی ماں نے مبینہ طور پر کرنٹ لگا کر دو معصوم بچوں کو قتل کردیا تھا۔ اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ انیلہ کی بھی خرم کے ساتھ دوسری شادی تھی، اس کا پہلے شوہر سے ایک سال کا بیٹا تھا، سوتیلے بچوں کو قتل کرنےکے بعد انیلہ اپنے بچے کو لے کر فرار ہوگئی تھی۔

اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ دو معصوم بچوں کے قتل کا افسوسناک واقعہ رائیونڈ کے گاؤں بابلیانہ اوتارڈ میں پیش آیا۔ 6 سالہ ابوذر اور 4 سالہ عمان شہزادی کو ان کی سوتیلی ماں نے کرنٹ لگا کر قتل کیا اور اپنا ایک سال کا بیٹا لے کر فرار ہو گئی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق ملزمہ کو صرف اس بات کا غصہ تھا کہ بچوں کا باپ بچوں کو پڑھانا لکھانا چاہتا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں