فلسطین کی آزادی، سعودی عرب فلسطینیوں کے شانہ بشانہ ہے، شاہ سلمان -
The news is by your side.

Advertisement

فلسطین کی آزادی، سعودی عرب فلسطینیوں کے شانہ بشانہ ہے، شاہ سلمان

ریاض: سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے کہا ہے کہ سعودی عرب فلسطین کی آزادی کے معاملے پر فلسطینیوں کے شانہ بشانہ کھڑا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی فرمانروا اور فلسطین کے صدر محمود عباس کی ریاض میں ملاقات ہوئی جس میں دو طرفہ علاقائی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس موقع پر شاہ سلمان نے اپنی اورمملکت کی مکمل حمایت کا یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ’ہم فلسطین کی آزادی اور فلسطینیوں کے مطالبے کے ساتھ کھڑے ہیں، فلسطین کو آزاد اور علیحدہ ملک تسلیم کیا جانا چاہیے‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’مشرقی یروشیلم مسلمانوں کا بیت المقدس اور فلسطین کا دارالحکومت ہے،  امریکا نے فوری طور پر اپنا سفارت خانہ بند کرے۔

مزید پڑھیں: اسرائیلی فورسز کی نہتے فلسطینیوں پر فائرنگ، دو نوجوان شہید

یاد رہے کہ پولینڈ میں ہونے والی امن کانفرنس کے دوران امریکا کے سیکریٹری خارجہ مائیک پومپیو نے اشارہ دیا کہ فلسطین اور اسرائیل کے درمیان امن کی خاطر ہم اپنا سفارت خانہ منتقل کرلیں گے۔

اُن کا کہنا تھا کہ خلیجی ممالک میں ایران کا کردار تشویشناک حد تک بڑھتا جارہا ہے، تمام ممالک کے سفیر یہاں موجود ہیں انہیں چاہیے کہ اس ضمن میں اپنا کردار ادا کریں۔

دوسری جانب اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے سفارت خانے کی ممکنہ منتقلی کے حوالے سے خاموشی اختیار کی، عالمی تجزیہ نگاروں کا ماننا ہے کہ اسرائیلی وزیراعظم 9 اپریل کو ہونے والے انتخابات کا فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: اقوام متحدہ فلسطین میں‌ یہودی آباد کاری کو روکے، سعودی عرب

یاد رہے کہ گزشتہ برس امریکی صدر نے یروشیلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرتے ہوئے اپنا سفارت خانہ منتقل کردیا تھا جس پر اسرائیل نے مسرت کا اظہار بھی کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں