The news is by your side.

Advertisement

خیبر پختونخواہ حکومت نے سیاحوں کیلئے گائیڈ لائن جاری کردی

پشاور : خیبر پختونخواہ حکومت نے سیاحتی مقامات پرسینیٹائزرزکی سہولت لازمی قراردی گئی اور کہا گیا سیاحوں کوفیس ماسک اورسینیٹائزرزساتھ لازمی رکھنا ہوگا، تمام انٹری پوائنٹس پرسیاحوں کادرجہ حرارت چیک کیاجائے گا۔

تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخواہ میں سیاحت، ہوٹل اورریسٹورنٹس سے متعلق ایس اوپیزجاری کردی ، جس میں سیاحتی مقامات پرسینیٹائزرزکی سہولت لازمی قراردی گئی ہے۔

محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ سیاحوں کوفیس ماسک اورسینیٹائزرزساتھ لازمی رکھناہوگا، تمام انٹری پوائنٹس پرسیاحوں کادرجہ حرارت چیک کیاجائے گا۔

ایس اوپیز کے مطابق ہوٹلز کے لئے تمام سیاحوں کا ڈیٹا رکھنا لازمی قرار دیا گیا ہے جبکہ سیاحتی مقامات میں ایمرجنسی کی صورت قریبی ہیلتھ سینٹر سےرجوع کرنا ہوگا ، بیمار سیاحوں کو صحت مند سیاحوں سے الگ رکھناہوگا۔

ایس اوپیز میں کہا گیا ہے کہ ڈی سیز،ڈی ایچ اوزایس اوپیزپرعمل،مانیٹرنگ کےذمہ دارہوں گے اور کورونامشتبہ سیاح کوجلدہی قریبی ہیلتھ سینٹرسےرجوع کرنا ہوگا۔

یاد رہے وفاقی وزیر اسد عمر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ کوروناوبا کے حوالے سےکافی بہتری سامنےآئی ہے، کرونا کے خلاف جنگ میں پاکستان کی کامیابی کو دنیا مان رہی ہے۔

انہوں‌ نے کہا کہ معاشی صورتحال کی بہتری کے لیے اہم فیصلے کیے گئے ہیں، ایس او پیز کے تحت ریسٹورنٹس اور ہوٹل کھولنے کی اجازت دی جائے گی، سیاحتی مقامات کے ریسٹورنٹس اور ہوٹلز8اگست سے کھول دیں گے جبکہ سینما،تھیٹر،پبلک پارکس،میوزیم کو بھی10اگست سے کھول دیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں