site
stats
اہم ترین

خیبر پختونخواہ میں دہشت گردی کے واقعات میں 52 فیصد کمی

پشاور:خیبر پختونخواہ پولیس کی سال2017 میں ہونے والی دہشت گردی اور کرائم گراف پر رپورٹ جاری کردی گئی جس کے مطابق صوبے میں دہشت گردی کے واقعات میں 52 فیصد کمی آئی۔

تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخواہ پولیس نے سال2017 میں ہونے والی دہشت گردی اور کرائم گراف پر رپورٹ جاری کردی۔

پولیس رپورٹ کے مطابق سال بھر کے دوران 356 کلو بارود، 9 خودکش جیکٹس، 278 دستی بم اور 398 پرائما کارڈ مختلف مقامات سے برآمد کیے گئے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ پولیس اور فورسز نے 2125 مشترکہ آپریشن مکمل کیے جبکہ سال 2017 میں 2892 اشتہاری ملزمان گرفتار کیے گئے۔

سی سی پی او پشاور کا کہنا ہے کہ سرچ آپریشن کے علاوہ خفیہ اطلاعات پر آپریشن بھی کیے گئے جن کے مثبت نتائج برآمد ہوئے۔

کرائم رپورٹ کے مطابق صوبے میں دہشت گردی کے واقعات میں 52 فیصد جبکہ قتل، اغوا، چوری اور اسٹریٹ کرائم کی وارداتوں میں 40 فیصد کمی آئی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top