The news is by your side.

Advertisement

خیبرپختونخوا حکومت کا کالعدم ٹی ایل پی کےاثاثے منجمد کرنےکا حکم

وفاقی حکومت کی جانب سے تحریک لبیک کو کالعدم قرار دیے جانے کے بعد خیبرپختونخوا ‏حکومت نے ٹی ایل پی کے اثاثے منجمد کرنے کا حکم دے دیا۔

وفاقی وزارت داخلہ کے فیصلے کی روشنی میں خیبر پختونخوا حکومت نے بھی کالعدم ٹی ایل پی ‏کے اثاثے منجمد کر دیے۔

کالعدم جماعت سےتعلق رکھنےوالےافراد کی جائیدادیں منجمدکرنےکے احکامات جاری کیے گئے ‏ہیں اور ساتھ ہی فنڈز یا جائیدادیں دینے والی شخصیات پر بھی پابندی عائد کر دی ہے۔

خیبرپختونخوا حکومت نے اس حوالے سے باقاعدہ نوٹیفکیشن کے ذریعے احکامات جاری کیے ہیں ‏اور متعلقہ محکموں کو ہدایات دی ہیں کہ آئندہ 48 گھنٹوں میں فیصلے پر عملدرآمد کیا جائے۔

قومی کاؤنٹر ٹیررازم اتھارٹی (نیکٹا) نے تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کو کالعدم تنظیموں کی ‏فہرست میں شامل کرلیا ہے۔
کاؤنٹر ٹیررازم اتھارٹی (نیکٹا) نے کالعدم تنظیموں کی فہرست میں تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل ‏پی) کو شامل کرلیا ، ٹی ایل پی کو فہرست میں 79 واں نمبر دیا گیا ہے۔

نیکٹا نے کالعدم تحریک لبیک پاکستان کو فنڈز، خیرات،امداد دینے پر پابندی عائد کرتے ہوئے کہا ‏ٹی ایل پی کوامداد دینادہشتگردوں کی مالی معاونت کےمترادف ہوگا۔

وزارت داخلہ نے صوبائی چیف سکریٹریوں کو ٹی ایل پی کے اثاثوں کا تعین کرنے کے لئے خطوط ‏لکھ دیئے ہیں۔

یاد رہے وفاقی حکومت نے انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت تحریک لبیک پاکستان پر پابندی ‏عائد کردی ہے، وفاقی کابینہ کی جانب سے مذہبی سیاسی جماعت پر پابندی عائد کرنے کی سمری ‏کی منظوری کے بعد وزارت داخلہ کی جانب سے ایک نوٹیفکیشن جاری کیا گیا تھا۔

وزارت داخلہ کی سمری میں تحریک لبیک پاکستان پر اس کے چیف سعد رضوی کی گرفتاری کے ‏بعد کی پرتشدد سرگرمیوں کی وجہ سے پابندی عائد کرنے کی سفارش کی گئی تھی ، جس کے ‏نتیجے میں دو پولیس اہلکار شہید اور 300 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں