The news is by your side.

Advertisement

مہنگائی کی روک تھام کے لیے خیبرپختونخوا حکومت کا نئے منصوبے پرعمل

پشاور: خیبرپختونخواہ حکومت نے مہنگائی کی روک تھام کے لیے نئے منصوبے پر عمل کرتے ہوئے تحصیل کی سطح پر2 کسان مارکیٹوں کے قیام کے لیے مقامات کی نشاندہی شروع کردی۔

تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخواہ حکومت نے تحصیل کی سطح پر2 کسان مارکیٹوں کے قیام کے لیے مقامات کی نشاندہی شروع کردی، سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ 500 سے زائد کسان مارکیٹیں ہنگامی بنیادوں پرقائم کی جائیں گی۔

سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ کسان مارکیٹ میں کوئی کرایہ یا دیگر ٹیکس وصول نہیں کیے جائیں گے، سستے داموں غذائی اجناس کسان مارکیٹ میں دستیاب ہوں گے۔

دوسری جانب چیف سیکرٹری کی سربراہی میں مہنگائی پر قابو پانے اور عوام کو فوری ریلیف دینے کے لیے اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا جس میں محکمہ داخلہ، زراعت، خوراک کے انتظامی سیکرٹریز سمیت دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

چیف سیکرٹری خیبرپختونخواہ نے کہا کہ ملاوٹ، ذخیرہ اندوزی اور مصنوعی مہنگائی پیدا کرنے والوں کے خلاف بلا امتیاز سخت کارروائی کی جائے، ناجائز منافع خوری کی روک تھام کے لیے مڈل مین کے کردار کو قانون کے دائرے میں لایا جائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس دفاتر میں بیٹھنے کی بجائے مارکیٹوں اور بازاروں میں اشیاء کی قیمتوں کو چیک کریں، انتظامیہ مصنوعی مہنگائی پیدا کرنے والے عناصر کے خلاف کریک ڈاؤن کرے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں