site
stats
پاکستان

کلثوم نواز کے خلاف 17 سال پرانی غداری کی ایف آئی آر منظر عام پر

حیدرآباد: قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 122 سے مسلم لیگ ن کی جانب سے نامزد خاتون امیدوار اور سابق وزیراعظم کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کے خلاف 17 سال پرانی غدای کی ایف آئی آر منظر عام پر آگئی۔

ذرائع کے مطابق بیگم کلثوم نواز کے خلاف 17 سال قبل حیدرآباد میں مقدمہ درج کیا گیا جس میں غداری اور فوج کے خلاف تقریر کے الزامات سمیت ایم پی او کی دیگر دفعات شامل ہیں۔

ویڈیو دیکھیں:

بیگم کلثوم نواز کے خلاف ایف آئی آر سن 2000 میں درج ہوئی کیونکہ انہوں نے مشرف دور میں سابق صدر پر تنقید کی تھی، ایف آئی آر میں موجودہ صدر ممنون حسین اور تہمینہ دولتانہ بھی نامزد ہیں۔

نمائندہ حیدر آباد زاہد کلہوڑو کے مطابق کلثوم نواز نے کارگل کے حوالے سے بات کی تھی جو کہ ملک کے خلاف جارہی تھی، انہوں نے پاکستانی سیکیورٹی اداروں کے خلاف بھی بات کی تھی، یہ ایف آئی آر ابھی تک ختم نہیں ہوئی اور نہ اس کا چالان کیا گیا، یہ ایف آئی آر سیل کردی گئی تھی۔

یاد رہے سپریم کورٹ کی جانب سے نوازشریف کو نااہل قرار دیے جانے کے بعد مسلم لیگ نے حلقہ این اے 122 کے لیے کلثوم نواز کا انتخاب کیا جبکہ تحریک انصاف کی خاتون رہنماء ڈاکٹر یاسمین راشد سمیت دیگر افراد نے کاغذاتِ نامزدگی جمع کروائے ہیں جن کی جانچ پڑتال کا عمل جاری ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top