The news is by your side.

Advertisement

کویت : تارکین وطن کے ورک پرمٹ کا نیا قانون تیار

کویت سٹی : کویت میں 60 سال کی عمر کے افراد کے لیے ورک پرمٹ کی تجدید کے حوالے سے ایک نیا مسودہ تیار کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق افرادی قوت کے لیے پبلک اتھارٹی نے ملک میں رہائش پذیر 60 سال کی عمر کے ایسے افراد کے لیے ورک پرمٹ کی تجدید کے حوالے سے ایک نیا مسودہ تیار کیا ہے جن کے پاس ہائی اسکول ڈپلومہ یا اس سے کم تعلیم ہے۔

باخبر ذرائع نے میڈیا کو بتایا کہ نیا مسودہ فیصلہ افرادی قوت کے لیے پبلک اتھارٹی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے آئندہ اجلاس میں پیش کیا جائے گا جس کی سربراہی وزیر انصاف اور وزیر مملکت برائے سالمیت کے فروغ جمال الجلاوی کریں گے۔

ذرائع نے انکشاف کیا کہ آئندہ فیصلے کے نئے مسودے میں ہیلتھ انشورنس کے علاوہ ورک پرمٹ کی تجدید کے عوض 250 دینار کی فیس مقرر کرنا بھی شامل ہے، یہ بتاتے ہوئے کہ مذکورہ فیس بورڈ آف ڈائریکٹرز کی جانب سے طے شدہ فیس سے کم ہے۔

سابق وزیر تجارت عبداللہ السلمان کی سربراہی میں اس کے آخری اجلاس میں اور پرائیویٹ ہیلتھ انشورنس کے علاوہ کام کرنے کی اجازت کے لیے 500 دینار مقرر کیے گئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ نئے فیصلے کا مسودہ بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ممبران کو ووٹ کے لیے پیش کیا جائے گا اور پھر عمل درآمد کے لیے ورک ڈپارٹمنٹس پر دستخط کرنے کے بعد فیصلے کا نیا ورژن فوری طور پر گردش میں لایا جائے گا۔

مزید برآں اور فیصلے کے حتمی ورژن کے لیے وزیر الجلاوی کی ترمیم اور منظوری کی توقع کی روشنی میں وزارت داخلہ اب بھی ان رہائشیوں کے لیے رہائشی اجازت نامے (اقامہ) میں توسیع یا تبدیلی کی سہولیات فراہم کر رہی ہے۔

اقاموں میں توسیع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ جن غیر ملکی تارکین وطن کی عمر 60 سال سے زیادہ ہے اور اسکول ڈپلومہ یا اس سے کم تعلیم ہے کیونکہ ان میں سے ہزاروں کو اپنے فیملی ویزا میں شامل ہونے کے لیے رہائشی اجازت نامہ حاصل کرنے کی اجازت دی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں