کراچی: ڈھائی کروڑ کی آبادی کیلئے فائر کی چند گاڑیاں -
The news is by your side.

Advertisement

کراچی: ڈھائی کروڑ کی آبادی کیلئے فائر کی چند گاڑیاں

کراچی: شہر قائد میں ڈھائی کروڑ کی آبادی ہونے کے باوجود فائر بریگیڈ کی چند گاڑیاں ہیں جن کی اکثریت خراب ہے، لیاری میں آگ لگی تو فائر بریگیڈ کی گاڑی کودھکا لگا کر لایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈھائی کروڑ سے زائد آبادی کے حامل کراچی میں فائر بریگیڈ کی گاڑیوں کی تعداد نہایت کم ہے اور جو موجود ہیں وہ ان فٹ ہیں اس کا مظاہرہ آج لیاری میں لگنے والی آگ کی صورت میں ہوا جہاں فائر بریگیڈ کی گاڑی کو دکھا لگانا پڑ گیا۔


اسی سے متعلق: کراچی: پرانا حاجی کیمپ میں لکڑی کے گودام میں آتشزدگی


اے آر وائی نیوز کے نمائندے صلاح الدین کے مطابق اگر شہر میں آتشزدگی کا کوئی بڑا واقعہ پیش آجائے تو فائر بریگیڈ کے پاس موجود گاڑیاں اس فوری بجھانے کی اہلیت نہیں رکھتیں، عملہ بھی کم ہے، جائے حادثہ پر پانی لانے کے لیے بائوزر بھی کم ہیں اور کچھ خراب ہیں ساتھ ہی ملازمین کو مراعات کی کمی کا سامنا ہے جس کے سبب ملازمین بھی ناخوش ہیں۔

اطلاعات کے مطابق ملک کے سب سے بڑے اور وسیع و عریض شہر کے لیے آگ بجھانے والی صرف 36 گاڑیاں ہیں ان میں سے دو ناکارہ اور باقی دھکا اسٹارٹ ہیں، آگ سے بچانے والی کراچی فائر برگیڈ خود آئی سی یو میں ہے۔

بلند و بالا عمارتوں کو آگ سے بچانے کے لیے شہر کو تین اسنارکل دیے گئے تھے،ان میں سے دو خراب پڑی ہیں، ایک سے زائد بلند عمارتوں میں آگ لگ جائے تو ایک اسنارکل کہاں کہاں جائے گی۔

فائر بریگیڈ کے افسران کاکہنا ہے کہ مرمت کے لیے فنڈز فراہم نہیں کیے جارہے، آگ سے لڑنے والے اپنے حالات سے لڑ رہےہیں۔

فائر فائٹرز اوور ٹائم اور نئی وردیوں سے بھی محروم ہیں، 6 ماہ گزر گئے عملے کو فائر رسک الاؤنس نہیں دیا گیا جس کے باعث وہ مایوسی کا شکار ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں