The news is by your side.

Advertisement

قاتل ڈور نے کمسن بچے کی زندگی کی ڈور کاٹ دی

لاہور: صوبائی دارالحکومت میں قاتل ڈور نے کمسن بچے کی جان لے لی۔

تمام تر حکومتی اقدامات بے سود، لاہور میں پتنگ بازی کا سلسلہ نہ رک سکا، پتنگ کی ڈور نے ایک اور معصوم بچے کی جان لے لی، ساڑھے 3 سالہ بچہ گلے میں ڈور پھرنے سے جاں بحق ہوگیا۔

کمسن بچے کے والد اویس نے افسوسناک واقعے سے متعلق بتایا کہ ساڑھے تین سالہ خضر اپنی نانی کے گھر سے واپس آ رہا تھا کہ اس دوران اسکے گلے میں ڈور پھر گئی جس سے وہ شدید زخمی ہوا، خضر کو پہلے نوازشریف اسپتال پھر میئو اسپتال منتقل کیا گیا جہاں انہوں نے موت کی تصدیق کردی۔

والد کے مطابق خضر میو اسپتال پہنچنے سے قبل ہی دم توڑ گیا تھا۔

واقعے کے بعد ڈی آئی جی آپریشنز ساجد کیانی نے ایس ایچ او مستی گیٹ انسپکٹر محمد زاہد نواز کو معطل کردیا، ڈی آئی جی نے ایس پی سٹی اور ڈی ایس پی علی اختر سے وضاحت طلب کرتے ہوئے کہا کہ ڈور پھرنے کے واقعات ہرگز قابلِ برداشت نہیں، غفلت کے مرتکب پائے جانے والوں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب نے لاہور میں ڈور پھرنے سےبچے کی موت پر دکھ کا اظہار کیا ہے، سردار عثمان بزدار نے پتنگ بازی کے واقعات پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے غفلت کے ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ پتنگ بازی کے واقعات قطعی ناقابل برداشت ہیں، پتنگ بازی پر پابندی کے قانون پر سختی سے عمل کرایا جائے، خلاف ورزی کرنے والوں کےخلاف بلاامتیاز کارروائی کی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں