site
stats
پاکستان

اے آر وائی کی بندش کیخلاف ملک بھرمیں مظاہرے، پی ایف یو جے کا احتجاج

لاہور/ پشاور/ ایبٹ آباد/ سبی  : پنجاب میں اے آر وائی نیوز کی پوزیشن کی تبدیلی اور پیمرا کے دہرے معیار کے خلاف ملک بھر کی صحافتی تنظیموں سیاستدانوں اور سول سوسائٹی نے احتجاج کیا ہے، جبکہ پی ایف یو جے نے پنجاب میں اے آر وائی نیوز کی بندش کیخلاف انٹرنیشنل فیڈریشن آف جرنلسٹس کو خط لکھ دیا۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی نیوز کی پنجاب میں نمبروں کی پوزیشن تبدیلی، پروگرام میں آواز کا بند کرنا اور سیاسی بنیادوں پر چینل کو بند کرنے پر صحافتی تنظیمیں سراپا احتجاج ہیں۔

اس حوالے سے صحافیوں نے پریس کلبوں کے باہر مظاہرے کیے، پیپلز پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف نے اے آر وائی سے اظہار یکجہتی کی۔

صدر پنجاب یونین آف جرنلسٹس شہزاد حسین بٹ نے ماظہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں اے آر وائی نیوز کی نشریات پر پابندی کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

اس موقع پرپیپلز پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف نے اے آر وائی سے اظہار یکجہتی کے لئے پنجاب اسمبلی میں قرار داد لانے کا اعلان کردیا۔

پشاور میں بھی صحافیوں نے پر یس کلب کے باہر اے آر وائی نیوز کی بندش ،نمبروں کی تبدیلی کے خلاف شدید احتجاج کیا اور حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔

ایبٹ آباد میں بھی صحافیوں نے اے آر وائی نیوز سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے شدید احتجاج کیا، مظاہرین اپنے مطالبات کے حق میں نعرے بازی کرتے رہے۔

سبی کے چیئرمین پریس کلب حاجی محمد جان مری نے مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں اے آر وائی نیوز کی پوزیشن تبدیل کرنا عوام سے خبر کا حق چھینے کے مترادف ہے ، انہوں نے مطالبہ کیا کہ پیمرا فوری ایکشن لے۔

کوٹ مٹھن میں انجمن تاجران نے بھی اے آر وائی نیوز کی پوزیشن کی تبدیلی پر شدید احتجاج کیا ہے۔

مزید پڑھیں: پنجاب میں کیبل پر اے آروائی نیوز کی پوزیشن تبدیل، اے آروائی نیوز کا پیمرا کو خط

دوسری جانب پاکستان فیڈریشن یونین آف جر نلسٹس (پی ایف یو جے) نے پنجاب میں اے آر وائی نیوز کی بندش کیخلاف انٹرنیشنل فیڈریشن آف جرنلسٹس کو خط لکھ دیا۔

پی ایف یو جے نے خط میں بین الاقوامی فیڈریشن آف جرنلسٹس کو پنجاب حکومت کی جانب سے اے آروائی نیوز کی بندش اور آزادی صحافت پرحملے سے آگاہ کیا۔

خط کے متن کے مطابق صحافی برادری نے آئی ایف جے سے درخواست کی ہے کہ وہ پنجاب حکومت کے اس اقدام کے خلاف بین الاقوامی فورم پر معاملہ اٹھائے اور پنجاب حکومت کی جانب سے آزادی صحا فت پر ہونے والے اس حملے کو ناکام بنائے۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top