The news is by your side.

Advertisement

لاہور، ماں بیٹی کے قتل کا ڈراپ سین، سگا بھائی ملوث، قاتل گرفتار

لاہور: پنجاب پولیس نے چار روز قبل قتل ہونے والی ماں بیٹی کے کیس کا معمہ حل کردیا، نشے کے عادی بھائی نے اپنی بہن اور بھانجی کو رقم نہ دینے پر قتل کیا۔

لاہور کے تھانہ لٹن روڈ کی حدود میں تین روز قتل ہونے والی ماں بیٹی کے قتل کا ڈراپ سین ہو گیا۔ نشے کا عادی بھائی بہن اور بھانجی کا قاتل میں ملوث نکلا جسے پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے گرفتار کیا۔

 سی آئی اے کوتوالی پولیس نے تھانہ لٹن روڈ کی حدود میں قتل ہونے والی 35 سالہ عائشہ اور اس کی بیٹی آمنہ کی پراسرار ہلاکت میں ملوث عثمان بشیرکوگرفتار کر لیا۔ مقتولین کے قتل کا مقدمہ بھی اسی تھانے میں ہی درج تھا۔

مزید پڑھیں: لاہور: لٹن روڈ کے گھر سے خاتون اور چھ سالہ بیٹی کی لاشیں برآمد، ایک ملزم گرفتار

ڈی ایس پی سی آئی اے کوتوالی عثمان حیدر کے مطابق ملزم عثمان مقتولہ عائشہ کا سگا بھائی ہے اور نشے کا عادی ہے، ملزم نے اپنی بہن عائشہ اور اس کی بیٹی کو چائے میں نشہ آور گولیاں دیں اور پھر انہیں گلا دبا کر قتل کیا۔

انہوں نے بتایا کہ ملزم نے دوران تفتیش اعتراف کیا کہ اُس نے بہن سے نشے کے لئے پیسے مانگے تھے، مطالبہ پورا نہ ہونے پر اپنی بھانجی اور بہن کو قتل کیا جبکہ اپنے ڈیڑھ سالہ بھانجے احد کو جائے واردات سے اٹھا کر گنگا رام ہسپتال کے واش روم میں چھوڑ دیا تھا۔

منظرِ عام پر آنے والی سی سی ٹی وی فوٹیج میں ملزم عثمان بشیر ننھے بچے کو واش روم میں چھوڑتا دیکھا جا سکتا ہے۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں