The news is by your side.

Advertisement

عدالت نے میاں منشا کے بیٹے کو کار کمپنی کے خلاف پروپیگنڈے سے روک دیا

لاہور: سِول عدالت نے میاں منشا کے بیٹے کو نجی کار کمپنی کے خلاف سوشل میڈیا پر پروپیگنڈا کرنے سے روک دیا۔

تفصیلات کے مطابق آج سِول جج محمد عمران یوسف نے لاہور کی سول عدالت میں نجی کار کمپنی کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کا کہنا تھا کہ میاں منشا کا بیٹا کار کمپنی کے خلاف سوشل میڈیا پر پروپیگنڈا کر رہا ہے۔

کمپنی کے وکیل بیرسٹر اسجد سعید نے مؤقف اختیار کیا کہ حسن منشا نے 4 لاکھ ڈالر کی کار بک کرائی مگر پوری رقم ادا نہیں کی جس کی وجہ سے کار کی ڈیلیوری نہیں ہوئی، جس پر حسن منشا نے سوشل میڈیا پر کمپنی کے خلاف پروپیگنڈا شروع کر دیا۔

وکیل کا کہنا تھا کہ پروپیگنڈے کی وجہ سے کمپنی کی ساکھ متاثر ہونے کا خدشہ ہے لہٰذا عدالت حسن منشا کو سوشل میڈیا پر پروپیگنڈا کرنے سے روکے۔

یہ بھی پڑھیں:  میاں منشاکے بینک پر ایک کروڑ 29 لاکھ روپے کا جرمانہ عائد

کیس کی سماعت کرتے ہوئے سِول عدالت نے حسن منشا کو سوشل میڈیا پر کمپنی کے خلاف پوسٹس کرنے سے روکتے ہوئے ان سے 23 نومبر کو جواب طلب کر لیا۔

واضح رہے کہ 5 اکتوبر کو میاں منشا کے بینک ایم سی بی اسلامک بینک پر ریگولیٹری قواعد ضوابط پورے نہ کرنے پر اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے ایک کروڑ انتیس لاکھ روپے جرمانہ عائد کر دیا تھا، یہ جرمانہ نان کمپلائینس اور ریگولیٹری ضروریات پوری نہ کرنے پر عائد کیا گیا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں