The news is by your side.

Advertisement

لاہور، ڈولفن فورس کے اہلکاروں کا 2 نوجوانوں پر بہیمانہ تشدد

لاہور: پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں پولیس تشدد کا ایک اور واقعہ سامنے آگیا، کیولری پل پر ڈولفن اہلکاروں نے نوجوانوں کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا، واقعے کی ویڈیو منظرعام پر آگئی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں پولیس تشدد کا ایک اور واقعہ سامنے آگیا، ڈولفن فورس کے اہلکاروں نے 2 نوجوانوں کو موٹرسائیکل کے کاغذات نہ ہونے پر تشدد کا نشانہ بناڈالا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں نوجوان ون ویلنگ کرتے ہوئے پکڑے گئے اور اہلکاروں کی جانب سے ان سے کاغذات طلب کیے گئے، کاغذات نہ ہونے پر پولیس اہلکاروں نے ان پر تھپڑوں کی بارش کردی۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ڈولفن اہلکار نوجوان کو تھپڑ مار رہا ہے، تشدد کے بعد موٹرسائیکل سواروں کو تھانہ نصیرآباد میں لاک اپ کردیا گیا۔

واقعے کی خبر نشر ہونے پر سی سی پی او لاہور بی اے ناصر نے رپورٹ طلب کرلی اور ڈولفن اہلکاروں‌ کو معطل کردیا، نوجوان پر ڈولفن اہلکاروں کے مبینہ تشدد کی ایس پی ڈولفن اسکواڈ کو انکوائری کی ہدایت کردی۔

سی سی پی او کا کہنا ہے کہ نوجوانوں پر تشدد میں ملوث اہلکاروں کے خلاف کاررئی کی جائے گی۔

ترجمان پنجاب پولیس کا کہنا ہے کہ شہریوں سے بدسلوکی کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی ہے، قانون کی خلاف ورزی ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ صوبے بھر میں 2 لاکھ پولیس اہلکار ڈیوٹی سر انجام دے رہے ہیں ان کی تربیت کا نیا طریقہ کار متعارف کرایا گیا ہے۔
یاد رہے کہ رواں ماہ پنجاب پولیس کے مبینہ تشدد سے دوران حراست ذہنی معذور شخص صلاح الدین انتقال کرگیا تھا جبکہ پولیس اس کی موت کو دل کا دورہ قرار دیتی رہی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں