لاہور: گلشن اقبال پارک میں خود کش دھماکہ، 71 افراد جاں بحق -
The news is by your side.

Advertisement

لاہور: گلشن اقبال پارک میں خود کش دھماکہ، 71 افراد جاں بحق

لاہور : علامہ اقبال ٹاؤن کے علاقے میں واقع گلشن اقبال پارک میں خود کش دھماکے سے کم از کم 71 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں، جس میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں، جبکہ 300 سے زائد افراد زخمی ہو گئے ۔

زخمیوں کو تشویش ناک حالت میں قریبی ہسپتالو ں میں منتقل کردیا گیا ہے جبکہ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

دھماکے کی اطلاع ملتے ہی پولیس کی بھاری نفری اور امدادی ٹیمیں جائے حادثہ پر پہنچ چکی ہیں جنہوں نے علاقے کو مکمل گھیرے میں لے کر سیل کر دیا ہے۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق خود کش حملہ آور کا سر بھی مل گیا ہے دھماکہ گلشن اقبال پارک کے گیٹ نمبر ایک پر ہوا ہے۔

ڈی سی او لاہور نے اب تک 68 افراد کی ہلاکت اور 300افراد کے زخمی ہونے کی تصدیق کردی ہے۔

عینی شاہدین کے مطابق دھماکہ پارک میں موجود جھولوں کے نزدیک ہوا۔ یاد رہے کہ آج مسیحی برداری کا ایسٹر کا تہوار اور چھٹی کے دن کی وجہ سے پارک میں کافی رش تھا۔

اطلاعات کے مطابق مذکورہ فیملی پارک کے باہر سیکیورٹی کے انتہائی ناقص انتظامات تھے۔ سیکیورٹی گارڈ بغیر چیکنگ کئے لوگوں کو اندر جانے دے رہے تھے۔

شام چھ بج کر 44 منٹ پر خود کش حملہ آور اندر داخل ہوا اور اس نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا، دھماکے کی آواز اتنی زور دار تھی کہ آس پاس کی عمارتیں لرز اٹھیں۔ دھماکے کے بعد پارک کو خالی کرا لیا گیا ۔

صدر، وزیر اعظم اور وفاقی وزراء کا اظہار افسوس

صدرپاکستان ممنون حسین وزیراعظم نواز شریف، وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف وفاقی وزراء چوہدری نثار علی خان، پرویز رشید سمیت دیگر شخصیات نے سانحہ لاہور میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر انتہائی دکھ اور مذمت کا اظہار کیا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ سانحہ لاہور پر دل خون کے آنسو رورہا ہے،وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ میرے بچے،بچیوں اور بہن بھائیوں کو نشانہ بنایاگیا، ہر حال میں دہشتگردوں کو کیفر کردار تک پہنچانا ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ دہشت گرد اپنا انجام دیکھ کر بزدلانہ وارکررہےہیں ،انہوں نے کہا کہ ملک اس وقت قومی یکجہتی کا متقاضی ہے،بحیثیت قوم تفرقات سےآزادہوکردہشتگردی کامقابلہ کرناہے،

وزیر اعلیٰ پنجاب نے دھماکے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب پولیس سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب نے زخمیوں کو فوری اور بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کا بھی حکم دیاہے۔

تین روزہ سوگ کا اعلان

وزیراعلیٰ پنجاب کی جانب سے صوبے میں تین روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا ہے، اپنے ایک بیان میں میاں شہباز شریف کا کہنا ہے کہ پارک میں معصوم بچوں، خواتین اور عام شہریوں کو نشانہ بنانے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں، اس کے ذمہ دار قانون کی گرفت سے بچ نہیں پائیں گے۔

عالمی برادری کی جانب سے سانحہ لاہور کی مذمت

لاہور دھماکے کی عالمی سطح پر بھرپور مذمت کی جارہی ہے۔امریکی حکومت کا کہنا ہےکہ معصوم لوگوں پر حملہ بزدلانہ کارروائی ہے، پاکستان کے ساتھ تعاون کو جاری رکھیں گے۔

امریکا کا کہناہے کہ وہ مشکل کی اس گھڑی میں پاکستان کے ساتھ کھڑے ہیں، دھماکے کی مذمت اور لواحقین سے اظہار تعزیت کرتے ہیں،

اتحادیوں سے ملکر خطے میں دہشتگردی کا خاتمہ کرینگے۔ کینیڈین وزیر اعظم نے بھی گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف کو بھارتی ہم منصب نریندر مودی نے ٹیلی فون پر افسوس کا اظہار کیا۔ نریندر مودی نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بزدل دہشت گردوں نے خواتین اور بچوں کو نشانہ بنایا جوقابل مذمت اور افسوسناک ہے۔

علاوہ ازیں بھارتی ادا کار رشی کپور نے بھی سانحہ لاہور پر اپنے گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کیا ہے اپنے ٹوئٹر پیغام میں ان کا کہناہے کہ ہم اس مشکل گھڑی میں ان بھائی بہنوں کے غم میں برابر کے شریک ہیں، جو اس سانحے سے متاثر ہوئے۔

 


At least 10 killed in Lahore suicide blast by arynews

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں