The news is by your side.

Advertisement

لاہور: چوبیس گھنٹے گزرگئے، مغوی بچہ نہ مل سکا

لاہور : چوبیس گھنٹے گزرنے کے باوجود ابدالین سوسائٹی سے اغواء ہونے والا نو سالہ سفیان تاحال مل نہ سکا۔ سفیان کے اغواء کا مقدمہ بچے کی والدہ ڈاکٹر تحسینہ کی مدعیت میں تھانہ نواب ٹاﺅن میں سابقہ شوہر مسعود اور نامعلوم افراد کے خلاف درج ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے علاقے ابدالین سوسائٹی سے گزشتہ روز اغواء ہونے والے نو سالہ بچے سفیان کا کچھ معلوم نہیں ہوسکا۔

مغوی بچے کی والدہ ڈاکٹر تحسینہ کا کہنا ہے کے پولیس کے مطابق بچہ باپ کے پاس ہے۔ ڈاکٹر تحسینہ نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو میں کہا کہ ان کا شوہر پہلے بھی میرے بچے کو اغواء کی دھمکی دے چکا ہے، اس لئے شبہ کے طور پر ایف آئی آر میں سابقہ شوہر کا نام بھی درج کروایا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس بچے کو بازیاب کروائے اگر بچہ باپ کے پاس ہے تو بھی پولیس بازیاب کروانے میں ٹال مٹول سے کام کیوں لے رہی ہے۔

گھریلو ملازمہ کے مطابق بچے کو سفید گاڑی میں چار نامعلوم افراد گھر کے باہر سے زبردستی اٹھا کر اپنے ہمراہ لے گئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں