The news is by your side.

لاہور کی لیبارٹریوں کا انسانی زندگیوں سے کھیلنے کا انکشاف، سرعام کی ٹیم نے بھانڈا پھوڑ دیا

لاہور: پنجاب کے شہر لاہور میں لیبارٹریوں کا انسانی زندگیوں سے کھیلنے کا انکشاف ہوا ہے، سرعام کی ٹیم نے بھانڈا پھوڑ دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کی لیباریٹریوں کا مکروہ دھندا سرعام کی ٹیم نے بے نقاب کردیا، بکرے اور مرغی کے سیمپلز کو انسانی خون قرار دے کر رپورٹ جاری کی جارہی تھی، سرعام کے آپریشن کے بعد چار لیبارٹریاں سیل کردی گئیں۔

لیبارٹریز میں رنگ ملے پانی پر یورین کی رپورٹ بھی بنادی جاتی تھی، لیبارٹریز بغیر ٹیسٹ کے ہی مریضوں کی رپورٹس جاری کررہی تھیں۔

جناح اسپتال لاہور کے باہر قائم لیبارٹریز میں سرعام کی ٹیم نے بکرے اور مرغی کا گوشت ٹیسٹ کرانے کے لیے دیا تو عملے نے بکرے اور مرغی کے خون کو انسانی خون قرار دے کر رپورٹ جاری کردی۔

مزید پڑھیں: سرعام ٹیم نے کرپشن میں ملوث اینٹی کرپشن کے افسر و اہلکار کو گرفتارکرادیا

نمائندہ اے آر وائی نیوز اقرار الحسن نے کہا کہ لاہور جناح اسپتال کے باہر کچھ لیبارٹریز کے بارے میں اطلاعات تھی کہ وہاں مریضوں کے ٹیسٹ کیے ہی نہیں جارہے تھے اور انہیں ایک معمول کی رپورٹ جاری کردی جاتی تھی۔

اقرار الحسن کا کہنا تھا کہ رنگے ہاتھوں پکڑے جانے کے بعد بہت سے لوگوں نے معذرت کی اور کہا کہ ہم تحقیق کررہے تھے۔

اقرار الحسن نے کہا یہ اسٹنگ آپریشن ہم نے سٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آپریشن کی نگرانی میں کیا تاکہ کوئی شک نہ رہے کہ ہم نے اس میں کسی قسم کی کوئی تبدیلی کی ہے۔

صوبائی وزیر صحت یاسمین راشد نے سنسنی خیز انکشافات پر کارروائی کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ مذکورہ لیبارٹریز کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں