The news is by your side.

Advertisement

گجرپورہ زیادتی کیس ، ملزمان تاحال آزاد، 14 مشتبہ افراد زیر حراست

لاہور : گجرپورہ میں خاتون سے زیادتی کیس میں ملزمان تاحال آزاد ہے ، خاکوں کی مددسے 14افرادکو احراست میں لیاگیا، جن میں سے 7 مشتبہ افرادکاڈی این اےٹیسٹ کرالیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں خاتون سے بچوں کےسامنے زیادتی کے واقعے کو پچاس سےزائدگھنٹے گزر گئے، ملزمان پولیس کی گرفت میں نہ آسکے، واقعے پر پولیس کی روایتی اورجدید طریقہ سے تفتیش جاری ہے،اب تک پولیس نے چودہ مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے۔
.
26پولیس کی ٹیموں نے 3کھوجیوں کے ہمراہ جائے وقوعہ کے اطراف 5کلو میٹر کا علاقہ چیک کرکے مشتبہ پوائنٹس مارک کر لئے جبکہ مختلف شواہد پر پولیس نے سات مشتبہ افراد محمد کاشف، عابد، سلمان، عبدالرحمن، حیدر سلطان، ابوبکر، اصغر علی کو حراست میں لیا، جن کے ڈی این اے ٹیسٹ کرائے گئے ہیں ۔

ملزمان سے ملتے جلتے حلیہ جات کے حامل15 مشتبہ افراد کی پروفائلنگ کی گئی جبکہ تین مختلف مقامات سے جیو فینسنگ کیلئے موبائل کمپنیوں کے حاصل کردہ ڈیٹا کا تجزیہ بھی جاری ہے۔

لوکل کیمروں سے مشتبہ افراد کی ویڈیو ریکارڈنگ حاصل کرکے شناخت کرنے کاعمل جاری ہے، آٓئی جی پنجاب نے کہا ہے کہ درندہ صفت ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کرکے قانون کے کٹہرے میں پیش کیا جائے گا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ میڈیکل رپورٹ میں خاتون کےساتھ زیادتی ثابت ہوگئی ، متاثرہ خاتون کا میڈیکل کوٹ خواجہ سعیداسپتال سےکرایاگیا ، جس جگہ خاتون کی گاڑی کھڑی تھی،موٹروےپروہاں کوئی باڑنہیں تھی۔

ڈی آئی جی انویسٹی گیشن شہزادہ سلطان نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر میں گفتگو کرتے ہوئے کہا اچھے انویسٹی گیشن افسران واقعے کی تحقیقات کررہے ہیں، ایک سال میں 12کیسز ہوئے،11 حل کرلئے گئے ہیں۔

شہزادہ سلطان کا کہنا تھا کہ فیکٹری کے کیمروں سے کچھ معلومات ملی ہیں، پہلے سے ایسے واقعات میں ملوث ملزمان کا ہمارے پاس ریکارڈ موجود ہے ، ملزمان کاحلیہ اوران کا سابقہ ریکارڈ سامنے رکھا جاتا ہے۔

یاد رہے ڈولفن فورس اہلکارعلی عباس نے بتایا تھا کہ موقع پرپہنچےتوگاڑی خالی تھی، پیروں کےنشان سےآگےجا کرآواز لگائی توخاتون نے بھائی کہہ کر جواب دیا، آگے گئے تو خاتون بچوں کےساتھ سہمی کھڑی تھیں۔

عینی شاہد خالدمسعود نےبتایا کہ ائیرپورٹ سےواپس سیالکوٹ جارہا تھا، لنک روڈپرخاتون نےمددمانگی تھی،فوری ون فائیو پر کال کی تھی،کاش میں خود رک گیا ہوتا تو شاید خاتون کی کچھ مددہوجاتی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں