The news is by your side.

Advertisement

لاہور: مفت اے سی نہ دینے پر ٹیکنیشن پولیس گردی کا شکار

لاہور : پولیس اہلکاروں نے مبینہ طور پر مفت اے سی نہ دینے پر اے سی ٹیکنیشن کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں عام شہریوں کے خلاف پولیس گردی کا ایک اور واقعہ پیش آیا ہے، جس کے خلاف متاثرہ شہری نے ایس ایس پی کو درخواست جمع کرادی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور کے مصری شاہ پولیس نے مبینہ طور پر مفت اے سی نہ دینے پر ٹیکنیشن کے خلاف مقدمہ درج کردیا، جس کی شکایت متاثرہ شہری نے سینئر سپرٹینڈنٹ آف پولیس ڈسپلن کو کردی۔

درخواست میں متاثرہ شہری نے الزام عائد کیا کہ پولیس اہلکاروں نے مفت اے سی کا مطالبہ کیا تھا لیکن میں نے انکار کردیا، اے سی نہ دینے پر اہلکاروں نے میرے گودام پر چھاپہ مارا اور گودام میں موجود دفتر سے اسلحہ اٹھاکر لے گئے۔

درخواست گزار کا کہنا تھا کہ بعد میں پولیس اہلکاروں نے مجھ پر سڑک پر اسلحہ لیکر چلنے کا جھوٹا مقدمہ درج کردیا۔

کچھ سال قبل پنجاب کے شہر گوجرانوالہ میں پولیس اہلکار بھا ئیوں کی غنڈہ گردی کرتے ہوئےانکوائری میں پیش ہونے سے روکنے کے لئے خاتون کو اس کے دو بیٹوں سمیت شدید تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔

تھانہ فیروز والہ کے علاقہ اپل جاگیر کے رہائشی بشارت کا کچھ عرصہ قبل اپنے محلے کے رہائشی پولیس اہلکار بھائیوں شوکت اور عبد الحمید سے گلی بنانے کے تنازع پر جھگڑا ہوا تھا، جس پر شوکت اور عبدالحمید نے تھانہ فیروز والہ میں بشارت کے خلاف ناجا ئز اسلحہ کا مقدمہ درج کروا دیا تھا،جس کے خلا ف بشارت نے اعلی پولیس افسران کو اس مقدمہ کی انکوا ئری کی درخواست دی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں