The news is by your side.

لاہور سے کراچی اور کوئٹہ ٹرین آپریشن بند کر دیا گیا

سکھر اور حیدر آباد میں شدید بارشوں کے باعث ریلوے ٹریک زیرِ آب آگئے جس کے باعث محکمہ ریلوے نے ٹرین آپریشن بند کر دیا ہے۔

ترجمان ریلوے حکام کے مطابق آج سے 30 اگست تک لاہور سے کراچی اور کوئٹہ ٹرین آپریشن بند کر دیا گیا ہے، پانی آنے کی وجہ سے اور مسافروں کی حفاظت کے پیشِ نظر آپریشن معطل کیا جا رہا ہے۔

ریلوے حکام کا کہنا ہے کہ مسافر قریبی ریزرویشن آفس اور آن لائن ایپ سے ریفنڈ لے سکتے ہیں۔

خیال رہے کہ سندھ میں طوفانی بارشوں کا سلسلہ جاری ہے جس کے باعث مختلف مقامات پر ریلوے ٹریک زیر آب ہیں۔ گزشتہ روز کراچی، کوئٹہ اور سکھر سیکشن پر متعدد مقامات پر ریلوے ٹریک بہہ گئے جس سے ٹرینوں کی آمدورفت میں 26 گھنٹے تک متاثر ہوئی۔

کراچی اور لاہور کے درمیان چلنے والی قراقرم اور کراچی ایکسپریس کو معطل کیا گیا۔ کراچی اور راولپنڈی کے درمیان چلنے والی پاکستان تیزگام ایکسپریس معطل رہے گی جب کہ کراچی سے پشاور کے درمیان چلنے والی ڈاؤن عوام ایکسپریس معطل رہے گی۔

اسی طرح کراچی سے کوئٹہ کے درمیان چلنے والی بولان ایکسپریس اور کوئٹہ سے پشاور کے درمیان چلنے والی جعفر ایکسپریس کو معطل کیا گیا۔

کوٹری، روہڑی، دادو، لاڑکانہ چلنے والی موئن جودڑو پسنجر کو بھی معطل کیا گیا۔ معطل کی گئی گاڑیوں کے مسافروں کو دوسری گاڑیوں میں ایڈجسٹ کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں