The news is by your side.

Advertisement

لاہورکا 11 سالہ فیضان دنیا کا کم عمرترین مصںف بن گیا

لاہور: پاکستان کے ثقافتی مرکزلاہور کے رہائشی گیارہ سالہ بچے فیضان اسلم صوفی نے دنیا کے دس کم عمرترین مصنفوں میں اپنا نام لکھوالیا۔

گیارہ سالہ بچہ فیضان اسلم صوفی ساتویں جماعت کا طالب علم ہے اورفیضان نے نو سال کی عمرمیں پہلی کتاب ’ہوول‘ لکھی جو کہ ایک سال بعد پبلش ہوئی جس نے فیضان کودنیا کے کم عمرترین مصنفوں کی فہرست میں شامل کردیا۔

کتابیں پڑھنے کے شوقین فیضان کا کہنا ہے کہ انہوں نے جب اپنی سوچ کی الجھی ہوئی گتھیاں سلجھا کراوران میں سے الفاظ منتخب کرکے ٹائپ کئے تو ان کی تصنیف وجود میں آگئی۔

کامیابی کی سیڑھیاں چڑھتے اس ننھے لکھاری کا جذبہ قابلِ ستائش ہے کیونکہ یہ جذبہ ہی پاکستان کا نام روشن کرنے میں اس کی مدد کرے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں