The news is by your side.

Advertisement

غریب افراد کو مفت آئی کیمپ میں آپریشن کروانا مہنگا پڑ گیا

لاڑکانہ: سندھ کے شہر قمبر شہداد کوٹ میں غریب افراد کو مفت آئی کیمپ میں آپریشن کروانا مہنگا پڑ گیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق قمبر شہداد کوٹ میں فری آئی کیمپ میں آپریشن کروانے والے 30 سے زائد افراد کی آنکھیں مزید خراب ہوگئیں، کیمپ سے متاثرہ افراد کو چانڈکا اسپتال لاڑکانہ کے شعبہ امراض چشم منتقل کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق متاثرہ افراد میں سے 6 کی حالت نازک بتائی جارہی ہے جنہیں طبی امداد کے لیے کراچی منتقل کیا گیا ہے۔

متاثرین کا کہنا ہے کہ مفت آئی کیمپ 29 جنوری کو لعلو رانئک کے علاقے میں لگایا گیا تھا، مذہبی جماعت کے آئی کیمپ میں آپریشن کے دوسرے روز حالت خراب ہوئی۔

متاثرین کے مطابق آپریشن کے بعد آنکھوں کی روشنی بڑھنے کے بجائے مزید کم ہوگئی، متاثرہ افراد نے مطالبہ کیا کہ مفت کیمپ لگانے والے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کی جائے۔

دوسری جانب ڈیوٹی ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ آئی کیمپ سے متاثرہ افراد کو چانڈکا اسپتال میں طبی امداد کی فراہمی جاری ہے، ایم ایس چانڈکا اسپتال ڈاکٹر ارشاد کاظمی کی ہدایت پر طبی سہولتیں فراہم کی جارہی ہیں۔

ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ کیمپ انتظامیہ کی غفلت سے آپریشن کرانے والوں کی آنکھیں انفیکشن کا شکار ہوئیں، انفیکشن سے متاثرہ افراد کی آنکھوں میں سوجن اور درد ہے۔

ڈیوٹی ڈاکٹر نے بتایا کہ چانڈکا اسپتال لائے گئے متاثرہ افراد میں سے 6 کو کراچی منتقل کیا گیا ہے، ابھی ہم نے متاثرین کو درد کم کرنے کا علاج فراہم کیا ہے، آنکھوں کی روشنی بحال ہوسکے گی یا نہیں اس بارے میں ابھی کچھ نہیں کہا جاسکتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں