site
stats
اہم ترین

لاڑکانہ : طارق سیال اور اسد کھرل کے ساتھی سمیت دس افراد گرفتار

لاڑکانہ: رینجرز نے طارق سیال اور اسد کھرل کے قریبی ساتھی عابد بگھیو سمیت دس مشکوک افراد کو گرفتار کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال کے بھائی طارق سیال کے فرنٹ مین کے فرار کے بعد لاڑکانہ میں رینجرز ایکشن میں آ گئی۔ اسد کھرل کے قریبی ساتھی انسپکٹر سی آئی اے جانی شاہ کے گھر کے اطراف ناکے لگادئیے گئے۔


10 including former naib nazim arrested in Asad… by arynews

رینجرز نے وزیر داخلہ سہیل انور سیال کے گھر کی جانب جانے والے راستوں کی پر بھی ناکہ بندی کر دی تھی لیکن وزیراعلیٰ سندھ کےرابطے کے بعد ڈی جی رینجرز نےناکہ بندی ختم کرادی۔

تحصیل ڈوکری کے گاؤں کارانی میں کارروائی کے دوران سابق یونین ناظم عابد بگھیو سمیت رینجرز نے دس مشکوک افراد کو گرفتار کر لیا، گرفتار افراد میں عامر بگھیو، ساجد بگھیو، راحب بگھیو، ابراہیم بگھیو ودیگر شامل ہیں۔

ذرائع کے مطابق گرفتارافراد سے اسلحہ بھی برآمد ہوا ہے، رینجرز نے لاڑکانہ کے سابق مئیر قربان عباسی کے بھتیجے منصور عباسی اور ڈگری کالج کے ہیڈ کلرک منظور منگن کی گرفتاری کیلئے بھی ان کے گھروں پر چھاپے مارے لیکن دونوں اپنے گھروں سے غائب تھے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اسد کھرل کے فرارمیں ملوث بااثر افراد کے خلاف بھی مقدمہ درج کرایا جائے گا۔ رینجرز کے مطابق عابد بگھیو مفرور اسد کھرل اور طارق سیال کا انتہائی قریبی ساتھی ہے۔ تازہ ترین اطکاعات کے مطابق رینجرز نے تفتیش کے بعد دس میں سے تین افراد کو چھوڑ دیاہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سندھ کی اہم حکومتی شخصیت کے ایک مبینہ فرنٹ مین کو لاڑکانہ میں حساس ادارے کی قید سے چھڑایا گیا تھا، معاملہ نمٹانے کے لئے وزیر داخلہ سندھ لاڑکانہ پہنچ گئے۔

لاڑکانہ کی اہم حکومتی شخصیت کے بھائی طارق سیال بھی اس دوران دو سو سے زائد افراد کے ہمراہ ناکے پر پہنچ گئے اور مشتعل افراد نے حساس ادارے کے اہلکاروں سے مبینہ طور پر بدسلوکی کی اور زیر حراست اسد نامی شخص کو اس ادارے کی حراست سے چھڑا کر فرار کرادیا گیا۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top