The news is by your side.

Advertisement

اودھ کے آخری حکمران نواب واجد علی شاہ کے پڑپوتے انتقال کر گئے

کولکتہ: ریاست اودھ کے شاہی خاندان کے آخری چشم و چراغ ڈاکٹر کوکب قدر سجاد علی مرزا گزشتہ شام کلکتہ میں انتقال کر گئے، وہ اودھ کے آخری تاجدار نواب واجد علی شاہ کے آخری پڑپوتے تھے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اودھ کے آخری تاجدار نواب واجد علی شاہ اور بیگم حضرت محل کے آخری پڑپوتے ڈاکٹر کوکب قدر سجاد علی مرزا گزشتہ شام کلکتہ کے پیرس اسپتال میں انتقال کر گئے۔

ڈاکٹر کوکب 87 برس کے تھے اور تقریباً ایک ہفتہ قبل ان کا کرونا وائرس ٹیسٹ ہوا تھا جو کہ پازیٹو تھا۔

ان کے پسماندگان میں بیوہ، 2 بیٹے اور 4 بیٹیاں ہیں، مرحوم کوکب قدر سجاد سبطین آباد ٹرسٹ مٹیا برج کلکتہ کے سینئر ٹرسٹی بھی تھے، جہاں ان کے پردادا نواب واجد علی شاہ مدفون ہیں۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق کوکب قدر سجاد علی مرزا نے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے شعبہ اردو میں نواب واجد علی شاہ کی ثقافتی اور ادبی خدمات پر پی ایچ ڈی کی اور وہیں سروس جوائن کرلی، وہاں سے وہ بطور اردو پروفیسر سنہ 1993 میں ریٹائر ہوئے۔

ڈاکٹر کوکب قدر بلیئرڈ اور اسنوکر کے میدان کے بھی مشہور و معروف کھلاڑی تھے، وہ بلیئرڈ اور اسنوکر آف انڈیا کے فاؤنڈر سیکریٹری تھے۔ وہ پہلی عالمی اسنوکر چمپیئن شپ کے چیف ریفری بھی بنے۔

کوکب قدر سجاد علی مرزا نے اپنی بیٹی منزلت فاطمہ کو سنہ 1980 میں جونیئر نیشنل اسنوکر چمپیئن شپ میں داخل کروایا جو نیشنل اسنوکر چمپیئن شپ میں داخل ہونے والی پہلی کھلاڑی بنیں۔

انہوں نے کئی اہم تصانیف بھی قلم بند کیں جن میں واجد علی شاہ پر ان کے تحقیقی مقالے اور اقلیم سخن کے تاجدار کی ادبی حلقوں میں کافی پذیرائی ہوئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں