site
stats
پاکستان

چیئرمین نیب کا احترام ہے لیکن ان کی زبان کو مخالفین نے استعمال کیا، رانا ثنا اللہ

press conference

لاہور: وزیر قانون پنجاب رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ نیب سے تعاون قانونی اور اخلاقی ذمہ داری سمجھتے ہیں، چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کا احترام ہے لیکن ان کی زبان کو مخالفین نے ہمارے خلاف استعمال کیا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا، رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ چیئرمین نیب کو کوئی شکوہ ہے تواختیارات بروئے کار لاسکتے ہیں، وزیر اعلی پنجاب کو نیب کی جانب سے نوٹس جاری ہوا، نیب کی جانب سے پہلے آگاہ کرنا ضروری تھا دو الفاظ لکھ کر بھیج دیتے تو میں پریس کانفرنس نہ کرتا۔

عوام نےعمران خان کا مہنگائی ڈرامہ فلاپ کر دیا ، راناثنا اللہ

انہوں نے کہا کہ نیب نے پنجاب کے پبلک سیکٹر کمپنیز کا ڈیٹا مانگا، پنجاب میں 53 کمپنیز ہیں جن میں سے 15 کمپنی ان ایکٹو ہیں، 29 دسمبر 2017 کو 6 کمپنیوں کا ریکارڈ نیب کو فراہم کیا، جبکہ رواں سال 19 جنوری کو مزید ایک کمپنی کا ریکارڈ فراہم کیا گیا۔

رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ ہم نے مزید 6 کمپنیوں کا ریکارڈ 30 جنوری کو جمع کرایا، نیب کا رویہ تضحیک آمیز ہوتا ہے، ریکارڈ جمع کرانے گئے تو پورا دن نیب میں بیٹھنا پڑا، چیئرمین نیب کو کوئی شکوہ ہے تو اختیارات بروئے کار لاسکتے ہیں۔

عمران خان کی طرح ان کی پولیس بھی لاڈلی ہے، راناثنااللہ

رہنما مسلم لیگ (ن) رانا ثنااللہ نے کہا کہ دیانت اور امانت سے عوام کی خدمت پر یقین رکھتے ہیں، نیب سرکاری ادارہ ہے جبکہ پنجاب کابینہ حکومت ہے، نیب کی زبان ہمارے مخالفین اچھالیں تو یہ صورت حال قبول نہیں، ہم نیب کے کرادار کو قابل ستائش سمجھتے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ نیب افسران نے چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو صحیح صورت حال سے آگاہ نہیں کیا، پنجاب حکومت کی پالیسی ہے میرٹ اور شفافیت پر عمل کیا جائے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top