The news is by your side.

Advertisement

صدرملتان ہائیکورٹ بار کی گرفتاری کا معاملہ، وکلا کا احتجاج، عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ

لاہور : صدرملتان ہائیکورٹ بار شیر زمان کی گرفتاری کے احکامات پر وکلا کی جانب سے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف آج ملک بھر میں عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس کی جانب سے ملتان ہائیکورٹ بار کے صدر کے وارنٹ جاری کرنے کے معاملہ پر لاہور ہائیکورٹ کے اطراف دوسرے روز بھی حالات کشیدہ ہیں، عدالت کو جانے والے تمام راستوں کو بڑے بڑے کنٹینرز رکھ کر سیل کر دیا گیا اور تمام راستوں پر خاردار تاربھی لگا دیے گئے ہیں۔

لاہور ہائیکورٹ کے اطراف وکلا کی بڑی تعداد نے احتجاج کیا، موجود وکلا کی جانب سے شدید نعرے بازی بھی کی گئی۔

ہائیکورٹ میں غیر یقینی صورتحال کو کنٹرول کرنے کے لیے رینجرز اور پولیس کی اضافی نفری تعینات ہے۔

گوجرانوالہ ڈسٹرکٹ بار کے وکلا نے ہڑتال کی اور احتجاجی ریلی نکالی،ریلی میں شریک وکلا نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے شدید نعرے باذی کی اس موقع پر مشتعل وکلا نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کے پتلے پر جوتے اور ڈنڈے برسائے اور پتلا بھی نذر آتش کیا۔

اس دوران وکلا کی جانب سے عدلیہ کے خلاف غلیظ زبان کا بھی استعمال کیا گیا وکلا کا کہنا تھاکہ ہم اپنے مطالبات کے حق کے لیے کسی بھی حد تک جانے سے گریز نہیں کر یں گے۔

ملتان میں بھی وکلا نے سیاہ پٹیاں باندھ کر احتجاج کیا، کچہر ی چوک پروکلا کے احتجاج کے پیش نظر پولیس کی نفری کو بھی تعینات کیا گیا ہے۔


مزید پڑھیں : ملتان بار کے صدر کی گرفتاری کا حکم، وکلا آپے سے باہر، لاہور ہائیکورٹ پر حملہ


اسلام آباد میں وکلا نے جزوی طور پر عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ کیا جبکہ سندھ میں وکلا برادری بھی ہڑتال پر ہے، جنوبی پنجاب میں وکلا نے عدالتی کارروائی کا مکمل بائیکاٹ کیا۔

دوسری جانب لاہور بار کا آج اجلاس ہوگا، جس میں آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا، لاہور میں وکلامیڈیا نمائندوں پر برہم ہوگئے، مشتعل وکلا نے میڈیا نمائندوں کو کوریج سے روک کر دھمکیاں دیں۔

یاد رہے گذشتہ روز ججز سے بدتمیزی کیس میں لاہور ہائکیورٹ کے چیف جسٹس کی جانب سے ملتان بار کے صدر کی گرفتاری کے حکم پر وکلا آپے سے باہر ہوگئے تھے اور لاہور ہائیکورٹ پر چڑھائی کردی، عدالت کا گیٹ توڑ دیا اور اینٹیں برسا دیں تھیں۔

لاہور ہائیکورٹ بار کے صدر چوہدری ذوالفقار نے وکلا پر تشدد کیخلاف کل پنجاب بھر میں ہڑتال کا اعلان کیا تھا، چوہدری ذوالفقار نے کہا تھا کہ کل پنجاب بھر میں کوئی وکیل کسی بھی عدالت میں پیش نہیں ہوگا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں