The news is by your side.

Advertisement

لیہ: زہریلی مٹھائی کی فرانزک رپورٹ جاری، اموات کی تعداد 29 ہوگئی

لیہ/ لاہور: جناح اسپتال لاہور میں زہریلی مٹھائی کھانے والا ایک اور مریض دم توڑ گیا۔ جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 29 ہوگئی۔ فرانزک رپورٹ کے مطابق مٹھائی میں فصلوں پر چھڑکنے والی دوا شامل تھی۔

تفصیلات کے مطابق جناح اسپتال لاہور میں لیہ میں زہریلی مٹھائی کھانے والا 11 سالہ سانول بھی دم توڑ گیا۔ زہریلی مٹھائی کھانے سے جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 29 ہوگئی جبکہ 17 مریض ابھی بھی اسپتال میں زیر علاج ہیں جن میں سے 2 کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

دوسری جانب واقعے کی انکوائری رپورٹ ڈی پی او لیہ نے آئی جی پنجاب کو بھجوا دی۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ متاثرہ افراد کے معدوں کے نمونے فرانزک ٹیسٹ کے لیے بھجوائے گئے تھے جس سے علم ہوا کہ متوفین نے جو مٹھائی کھائی اس میں زرعی ادویہ شامل تھیں۔ فرانزک رپورٹ کے مطابق کلوروفیناپر نامی دوا کیڑے مکوڑوں سے بچانے کے لیے فصلوں پر چھڑکی جاتی ہے۔

پولیس کی تحقیق کے مطابق مٹھائی کی دکان کا مالک کاشت کار ہے۔ دکان سے گرفتار کیے جانے والے تین ملازمین نے بتایا کہ گندم کی فصل کے لیے منگوائی گئی زہریلی ادویات مٹھائی میں شامل ہوگئیں۔

پولیس نے دکان مالک اور محمکہ زراعت کے افسر سمیت 7 افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ کیڑے مار دوائی بنانے والی فیکٹری کو بھی سیل کردیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں