وزیراعظم نے 32سال بعد پھر لیہ تونسہ پل کاسنگ بنیاد رکھ دیا -
The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم نے 32سال بعد پھر لیہ تونسہ پل کاسنگ بنیاد رکھ دیا

لیہ : وزیراعظم نوازشریف نے ایک بار پھر لیہ تونسہ پل کاپھر اعلان کردیا، اس سےپہلے بھی اس پل کا دو مرتبہ سنگ بنیاد رکھا جاچکا ہے، نوازشریف وزیراعلٰی سے وزیراعظم بن گئے، مگر وعدہ وفا نہ ہوسکا، شہریوں نے پُل کے ایک اور سنگ بنیاد کو ڈرامہ قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم میاں نواز شریف نے 700 کروڑ روپے کی لاگت سے تیار ہونے والے لیہ تونسہ پل کا ایک بار پھر سنگ بنیاد رکھ دیا،جبکہ آج سے بتیس سال قبل بھی بحیثیت وزیر اعلیٰ پنجاب اس پل کا سنگ بنیاد رکھ چکے ہیں۔

سال انیس سو پچاسی میں نواز شریف نے وزیراعلیٰ کی حیثیت سے لیہ پل کا سنگ بنیاد رکھا اس کے بعد سال دوہزار تیرہ کے الیکشن کے دوران نواز شریف لیہ آئے پھر اسی پل کی تعمیر کا وعدہ کیا اور آج چار سال بعد نواز شریف نے بتیس سال کے بعد دوسری بار لیہ پل کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔

پل کے سنگ بنیاد کے حوالے سے لیہ کے شہریوں نے اسے مذاق قرار دیتے ہوئے اپنے شدید غم و غصے کا اظہار کیا ہے ان کا کہنا ہے کہ وزیراعظم صاحب ! بتیس سال ہوگئے آپ کے وعدے کو ایک نسل گزرگئی اوراب دوسری نسل اس انتظار میں بوڑھی ہورہی ہے، خدارا تیسری نسل پر احسان کریں۔

انہوں نے کہا کہ آپ وزیراعلیٰ سے وزیراعظم بن گئے لیکن پل نہ بن سکا، پُل کا پھر سنگ بنیاد رکھنا محض ڈرامہ ہے۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ اب یہ پل تکمیل تک پہنچ بھی پائے گا یا پھر لیہ کایہ پل 30 سال تک زیر تعمیر ہی رہے گا۔

یاد رہے کہ اس پل کی تعمیرسے لیہ اور تونسہ کے درمیان 180 کلومیٹر کا فاصلہ کم ہو کر صرف 24 کلومیٹر رہ جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں