The news is by your side.

Advertisement

عدالت نے بلدیاتی الیکشن کے انعقاد سے متعلق تجاویز طلب کرلیں

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے الیکشن کمیشن اور صوبائی حکومتوں سے بلدیاتی الیکشن کے انعقاد سے متعلق تجاویز کل طلب کر لیں۔

جسٹس جواد ایس خواجہ نے کہا ہے کہ عدالت الیکشن مؤخر کرنے اورمجوزہ نیا شیڈول پر جائزے کے بعد فیصلہ کرے گی۔ جسٹس جواد ایس خواجہ کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سندھ  پنجاب کے بلدیاتی انتخابات سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

ایڈوکیٹ جنرل پنجاب نوید رسول نے عدالت کو بتایا کہ انہوں نے پہلے ہی کہا تھا کہ ستمبر کے مہینے میں پنجاب میں سیلاب آتے ہیں۔

افسران کی بڑی تعدا د سیلاب زدہ علاقوں میں بحالی کے کاموں میں مصروف ہے۔ چودہ پندرہ اکتوبر کو محرم کی سیکورٹی کے لئے بھی افسران کو تعینات کیا جانا ہے۔

جسٹس جواد ایس خواجہ نے کہا کہ چھ سال سے بلدیاتی انتخابات نہیں ہوئے۔ ایڈوکیٹ جنرل کا کہنا تھا کہ وہ اس بات پر معافی مانگ لیتے ہیں۔

جسٹس جواد کا کہنا تھا کہ آپ کی معافی کی ضرورت نہیں۔ معافی مانگنی ہے تو صوبائی حکومتوں کو عوام سے مانگنی چاہیے، سندھ اور پنجاب میں تسلسل سے یہ ہی حکومتیں کام کر رہی ہیں مگر بلدیاتی انتخابات نہیں ہوئے۔

جسٹس دوست محمد نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ محرم کے بعد کوئی مسلئہ پیدا ہوا تو کیا ہو گا۔ سندھ کی حکومت کی جانب سے وکیل کے پیش نہ ہونے پر عدالت نے برہمی کا اظہا کیا۔

عدالت نے ایڈوکیٹ جنرل سندھ کو کل طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت کل تک ملتوی کر دی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں