The news is by your side.

Advertisement

لبنانی فوجی نے منگیتر کے دانتوں کا علاج کرنے والے ڈاکٹر کو قتل کر دیا

بیروت: لبنان میں ایک حاضر سروس فوجی نے منگیتر کے دانتوں کا علاج کرنے والے ڈاکٹر کو اس کے کلینک میں قتل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق لبنانی فوج کے ایک حاضر سروس سارجنٹ سلیم فہد نے منگیتر کی شکایت پر ڈینٹسٹ کو قتل کر دیا، معلوم ہوا کہ منگیتر نے دانتوں کا درست علاج نہ کرنے کی شکایت کی تھی، جس پر وہ سخت طیش میں آ گیا تھا۔

امارات الیوم اخبار کے مطابق یہ واقعہ لبنان کے علاقے ’ابلح الفرزل‘ میں پیش آیا، پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ ایک شخص نے دندان ساز کو قتل کر دیا ہے، اور مقتول کی نعش اس کے کلینک میں پڑی ہے۔

اس سلسلے میں ایک سی سی ٹی وی فوٹیج بھی منظر عام پر آئی، جس میں قاتل کو واردات کے بعد سکون کے ساتھ کلینک سے باہر نکلتے دیکھا جا سکتا ہے۔

ابتدائی تحقیقات میں قتل کی وجہ یہ سامنے آئی کہ ملزم کی منگیتر اپنے دانتوں کا علاج کرانے کے لیے علی جاسر نامی ڈینٹسٹ کے کلینک گئی تھی، علاج کے بعد اسے کوئی خاص فرق نہیں پڑا جس پر اس نے اپنے منگیتر سے ڈاکٹر کی شکایت کرتے ہوئے اپنی تکلیف کا ذکر کیا۔

منگیتر کی شکایت سارجنٹ سے برداشت نہ ہوئی اور وہ طیش میں آکر ڈاکٹر کے کلینک پہنچا، جہاں بحث کے دوران اس نے ڈاکٹر پر تیز دھار آلے سے حملہ کر دیا۔

رپورٹس کے مطابق ڈاکٹر موقع پر ہی ہلاک ہوگیا تھا جس کی نعش پولیس نے اپنی تحویل میں لے لی، بعد ازاں فوجی کو بھی گرفتار کر لیا گیا۔ ڈاکٹروں کی یونین نے قاتل کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے، جب کہ سوشل میڈیا پر بھی لوگوں نے شدید غم وغصے کا اظہار کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں