The news is by your side.

Advertisement

لاہور ہائیکورٹ نے طالبہ خدیجہ صدیقی پر حملہ کرنے والے مجرم کو بری کردیا

لاہور: قانون کی طالبہ خدیجہ صدیقی پر حملہ کرنے والے مجرم شاہ حسین کو لاہور ہائیکورٹ نے ناکافی شواہد کی بنا پر بری کردیاْ۔

تفصیلات کے مطابق ہائیکورٹ کے جسٹس سردار احمد نعیم نے کیس کا فیصلہ سنایا، مجرم شاہ حسین نے سیشن عدالت کے فیصلے کے خلاف لاہور ہائیکورٹ میں اپیل دائر کی تھی۔

اے آر وائی نیوز کے نمائندہ عابد خان کے مطابق لاہور کی مقامی عدالت نے ملزم شاہ حسین کو سات سال قید کی سزا سنائی تھی، فیصلے کے خلاف مجرم نے سیشن عدالت سے رجوع کیا تھا جس پر سیشن عدالت نے سات سال سے سزا کم کرکے پانچ سال کردی تھی۔

شاہ حسین پر قانون کی طالبہ خدیجہ صدیقی پر چھریوں کے 23 وار کرکے اسے شدید زخمی کرنے کا الزام تھا، اس وقت کے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے معاملے کا انتظامی نوٹس لیتے ہوئے کیس کا ایک ماہ میں فیصلہ کرنے کا حکم دیا تھا۔

چیف جسٹس کے حکم پر جوڈیشل مجسٹریٹ مبشر حسین نے ایک ماہ میں اس کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے مجرم کو سات سال قید کی سزا سنائی تھی، ملزم شاہ حسین پر الزام تھا کہ اس نے اپنی کلاس فیلو قانون کی طالبہ خدیجہ صدیقی پر چھری کے 23 وار کرکے اسے شدید زخمی کردیا تھا۔

واضح رہے کہ ملزم کو سزا سناتے ہوئے جوڈیشل مجسٹریٹ نے قرار دیا تھا کہ قانون کی طالبہ خدیجہ صدیقی کا بچنا کسی معجزے سے کم نہیں تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں