The news is by your side.

Advertisement

خواتین کوعدالتی شعبےمیں مشکلات کا سامنا ہے‘ جسٹس منصورعلی شاہ

لاہور : چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ منصورعلی شاہ کا کہنا ہے کہ ضلعی عدالتوں میں خواتین کے حقوق کے لیے اقدامات کیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں خواتین ججز کی 3 روزہ کانفرنس کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ منصورعلی شاہ نے کہا کہ ہائی کورٹ میں کیس مینجمنٹ کی کوشش کی۔

انہوں نے کہا کہ خواتین سےمتعلق مقدمات میں کیس مینجمنٹ سےمددملتی ہے، ایک دواقدامات سے خواتین کے مسائل کا حل ممکن نہیں تھا۔

چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ نے کہا کہ ماتحت عدالتوں کے 36 ججوں سے تفصیلی بات کی جبکہ ججوں کے مسائل کا ہرممکن جائزہ لیا گیا۔ انہوں نے ایک دوسرے سے رابطےکے بغیرعدلیہ میں بہتری ممکن نہیں۔

جسٹس منصورعلی شاہ نے کہا کہ ضلعی عدالتوں میں خواتین کےحقوق کے لیےاقدامات کیے ہیں جبکہ اسٹیک ہولڈرزکومل کرآئندہ کا لائحہ عمل تیارکرنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ سیشن ججزکوعدلیہ کا اہم حصہ ہونے کا احساس دلایا، ایڈوائزری کمیٹی کی مدد سے سیشن ججزکے مسائل جانے۔

چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ نے کہا کہ ہائی کورٹ میں اسپیشل بینچزقائم کررہےہیں، سیشن ججزکوعدلیہ کا اہم حصہ ہونے کا احساس دلایا۔

انہوں نے کہا کہ ایڈوائزری کمیٹی کی مددسےسیشن ججزکےمسائل جانے، آج کے سیشن کا مقصد خواتین ججزکے مسائل سے آگاہی ہے۔

جسٹس منصورعلی شاہ نے کہا کہ کوشش ہے ماڈل کورٹ کا دائرہ پورے پنجاب میں پھیلائیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں 12لاکھ سےزائدمقدمات زیرسماعت ہیں۔

واضح رہے کہ ڈسٹرکٹ کورٹ میں آڈٹ کےذریعےمسائل کی نوعیت سےآگاہی حاصل کی،عدالتوں میں ڈسٹرکٹ ججوں کے بچوں کے لیے کیئر سینٹر قائم کررہے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں