The news is by your side.

Advertisement

لاہور ہائی کورٹ کا حمزہ شہباز کے گھر کے باہر رکاوٹیں فوری طور پر ہٹانے کا حکم

لاہور : لاہور ہائی کورٹ نے ڈی سی اور سی سی پی او لاہور کو حمزہ شہباز کے گھر کے باہر رکاوٹیں فوری طور پر ہٹانے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کے گھر کے باہر رکاوٹوں کو ہٹانے کے لیے درخواست پر سماعت پر سماعت ہوئی، جسٹس علی اکبر قریشی نے سماعت کی۔

درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ جوڈیشل کالونی میں حمزہ شہباز نے اپنے گھر کے پیچھے گلی میں ناجائز رکاوٹیں کھڑی کی ہیں، سرکاری زمین پر جنریٹر مرغیوں کے لیے پنجرہ تعمیر کر کے رکاوٹیں بنائی گئی ہیں جس کی وجہ سے رہائشیوں کو آمد و رفت میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

دائر درخواست میں کہا گیا کہ سیکورٹی کے نام پر رکاوٹیں آئین کی کی خلاف ورزی ہے۔ سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود سڑک پر رکاوٹیں قائم کی گئی ہیں۔

درخواست گزار نے استدعا کی عدالت حمزہ شہباز کے گھر کے باہر رکاوٹیں ختم کروانے کے احکامات جاری کرے۔

دلائل کے بعد عدالت نے سی سی پی او لاہور اور ڈی سی لاہور کو فوری رکاوٹیں ہٹانے کا حکم دے دیا اور کیس پر سماعت آئندہ منگل تک ملتوی کر دی۔

یاد رہے گشتہ روز اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کے گھر کے باہررکاوٹیں نہ ہٹانے کے اقدام کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا، درخواست منیر احمد کی جانب سے اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے دائر کی تھی۔

درخواست میں پنجاب حکومت، ہوم سیکرٹری ،ڈی جی ایل ڈی اے اور دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں