The news is by your side.

Advertisement

لاہور ہائی کورٹ نے ماڈل ایان علی کی درخواست پر اعتراض لگاکر واپس کردی

لاہور : لاہور ہائی کورٹ کے رجسٹرار آفس نے ایان علی کی وارنٹ گرفتاری کے خلاف درخواست پر اعتراض عائد کرکے درخواست واپس کردی، ایان علی کا کہنا تھا کہ الزامات کا سامنا کرنے کے لئے ٹرائل عدالت پیش ہونا چاہتی ہوں، وارنٹ گرفتاری واپس لئے جائیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے رجسٹرار آفس نے ایان علی کی وارنٹ گرفتاری کے خلاف درخواست پر اعتراض عائد کرتے ہوئے کہا ایان علی کی درخواست کے ساتھ مصدقہ بیان حلفی منسلک نہیں۔

رجسٹرار آفس نے اعتراض عائد کرکے ایان علی کی درخواست واپس کردی۔

یاد رہے ماڈل ایان علی نے وارنٹ گرفتاری کے خلاف لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کیا تھا، ایان علی نے وارنٹ گرفتاری کے خلاف درخواست آفتاب باجوہ ایڈووکیٹ کی توسط سے درخواست دائر کی تھی۔

درخواست میں ایان علی کا کہنا تھا کہ الزامات کا سامنا کرنے کے لئے ٹرائل عدالت پیش ہونا چاہتی ہوں، بے گناہی ثابت کرنے کے لئے کسٹم عدالت میں ہیش ہونے کاموقع دیا جائے۔

مزید پڑھیں : ماڈل ایان علی نے وارنٹ گرفتاری کے خلاف لاہورہائی کورٹ سے رجوع کر لیا

درخواست میں کہا گیا آئین کے آرٹیکل دس اے کے تحت شفاف ٹرائل ہر شہری کا بنیادی حق ہے، کسٹم عدالت کی جانب سے جاری وارنٹ گرفتاری واپس لئے جائیں۔

یاد رہے 9 مارچ کو کسٹم عدالت نے پیش نہ ہونے پر ایان علی کو اشتہاری قرار دیتے ہوئے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے تھے۔

خیال رہے ایان علی پر پانچ لاکھ ڈالر غیر قانونی طور پر بیرون ملک منتقل کرنے کے الزام کے تحت کسٹم حکام نے مقدمہ درج کر رکھا ہے۔

واضح رہے کہ ماڈل ایان علی 2015 میں اسلام آباد ائیرپورٹ سے دبئی پانچ لاکھ ڈالرز غیر قانونی طورپر لے جاتے ہوئے پکڑی گئیں تھیں، جس کے بعد انہیں تین ماہ جیل کی ہوا کھانی پڑی تھی، کیس کی سماعت کسٹم عدالت میں ہوئی اور عبوری چالان میں ملزمہ کو قصور وار قرار دیا گیا۔

ایان علی کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا تھا، بعد ازاں ایان علی نے لاہور ہائیکورٹ میں ضمانت کی درخواست دائر کی جس پر عدالت نے ان کے حق میں فیصلہ سنایا اور بیرونِ ملک جانے کی اجازت بھی دی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں