سعد رفیق پر مقدمہ درج کرنے کی درخواست، دلائل مکمل کرنے کا حکم -
The news is by your side.

Advertisement

سعد رفیق پر مقدمہ درج کرنے کی درخواست، دلائل مکمل کرنے کا حکم

لاہور: ہائی کورٹ نے رائل پام کلب پر قبضہ کرنے کے الزام میں وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق سمیت دیگر حکام کےخلاف مقدمہ کے اندراج اور کلب کی بندش کے خلاف درخواستوں پر وکلا کو دلائل مکمل کرنے کی ہدایت کردی۔

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شمس محمود مرزا نے رائل پام کلب کی انتظامیہ کی درخواست پر سماعت کی۔ کلب انتظامیہ کے وکیل علی ظفر نے دلائل دیے کہ کلب انتظامیہ نے قانون کے مطابق رائل پام کی زمین لیز پر حاصل کی اور قانون کے مطابق ہی تمام تر واجبات ادا کیے تاہم ریلوے انتظامیہ نے بلا جواز کلب کو بند کر کے اس پر قبضہ کیا، املاک کو نقصان پہنچایا اور اہم دستاویزات اپنے قبضے میں لے لیں۔

وکیل علی ظفر نے مزید کہا کہ حالانکہ کلب اور ریلوے انتظامیہ کا تنازع سول کورٹ میں زیر سماعت ہے اور اس حوالے سے سول کورٹ نے حکم امتناع بھی جاری کیا مگر اس کے باوجود ریلوے انتظامیہ کلب پر قابض ہے۔

کلب انتظامیہ کی جانب سے وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد اور ریلوے حکام کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست دی گئی لیکن ماتحت عدالت نے درخواست خارج کر دی۔

رائل پام کی جانب سے استدعا کی گئی کہ کلب پر قبضہ کرنے اور اس کی املاک کو نقصان پہنچانے پر خواجہ سعد رفیق اور دیگر حکام کے خلاف مقدمہ درج کرنے اور قبضہ فوری ختم کرنے کا حکم دے۔

عدالت نے درخواست گزار کلب کے وکلا کو دو ستمبر تک دلائل مکمل کرنے کی ہدایت کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں