The news is by your side.

Advertisement

عدالت نے وزارت داخلہ سے سانحہ منیٰ سے متعلق تفصیلات طلب کرلیں

لاہور: عدالت نے وفاقی وزارت داخلہ سے سانحہ منیٰ کے متاثرین کی تفصیلات پیش کرنے کا حکم دیدیا.

تفصیلات کے مطابق لاہورہائیکورٹ نے سانحہ منی کے متاثرین کی تفصیلات طلب کرنے کے لئے دائر درخواست پرمتاثرین کی تفصیلات پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے وفاقی حکومت کو منیٰ حادثے میں جاں بحق ہونے والے پاکستانیوں کی درست تعداد فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔

جسٹس عائشہ اے ملک نے کیس کی سماعت کی، درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ جدہ میں پاکستانی قونصل خانے کی جانب سے سانحہ منیٰ کے شہدا اور زخمیوں کی اصل تعداد چھپائی جا رہی ہے.

عالمی میڈیا دو سو چھیاسی پاکستانیوں کے شہید ہونے کی اطلاعات فراہم کر رہا ہے، پاکستانی قونصلیٹ جان بوجھ کر اصل تعداد چھپارہا ہے.

درخواست میں کہا گیا ہے کہ ڈائریکٹرجنرل حج جدہ ابو عاکف اور ڈائریکٹر حج رافع بشیر شاہ سیاسی بنیادوں پر میرٹ کے برعکس تعینات ہوئے، سفارتی عہدیدار اس عہدے کے اہل نہیں تھے جس کی وجہ سے منی سانحہ کے بعد سے اب تک انکی نا اہلی کھل کر سامنے چکی ہے.

عدالت سانحہ منی کے متاثرہ پاکستانیوں کا تمام ریکارڈ عدالت میں طلب کرے، عدالت نے وفاقی حکومت اور وفاقی وزارت داخلہ کو سانحہ منی کے متاثرہ پاکستانیوں کی تمام تر تفصیلات عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے ہوئے سماعت چھ اکتوبر تک ملتوی کر دی گئی۔

یاد رہے کہ سانحے میں مجموعی طور پر جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 769 ہے جبکہ اب تک 45 پاکستانیوں کے جاں بحق ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے۔

گزشتہ پچیس سالوں میں حج کے دوران یہ سب سے مہلک واقعہ تھا جس کے دوران اتنی بڑی تعداد میں ہلاکتیں پیش آئیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں