site
stats
عالمی خبریں

استنبول حملہ: جاں بحق خاتون نے موت کی پیش گوئی کردی تھی

استنبول: ترکی حملے میں جاں بحق 39 افراد میں شامل لبنانی خاتون نے وطن روانگی سے قبل اپنی فیس بک پر موت کی پیش گوئی کردی تھی۔

لبنانی نیوز ایجنسی کے مطابق ریتا شامی کی والدہ سرطان کے مہلک مرض کا شکار ہوکر کچھ روز قبل ہی دنیائے فانی سے کوچ کرچکی ہیں جس کے بعد وہ بھی اپنی زندگی سے بہت مایوس رہنے لگی تھی اور اُس نے ترکی جانے سے قبل اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر نہایت غمزدہ جملہ تحریر کیا۔

ریتا شامی نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر تحریر کیا کہ ’’امید ہے ہم ترکی میں بھرپور مزہ کریں گے البتہ اُسی مقام پر کسی بدترین دھماکے یا حادثے کی صورت میں میری موت واقع ہوجائے گی اور میں بھی ماں کے پاس چلی جاؤں گی‘‘۔

پڑھیں: ’’ ترکی نائٹ کلب فائرنگ، معروف بالی ووڈ فلمساز ہلاک ہونے والوں میں شامل ‘‘

غم سے نڈھال ریتا کے والد کا کہنا ہے کہ ’’میں نے بیٹی کو ترکی جانے سے روکنے کی کوشش کی مگر اُس نے جانے کا فیصلہ کیا اور ضد کر کے مجھے راضی کر کے روانہ ہوئی‘‘۔

ترکی حادثے میں جاں بحق ہونے والی ریتا نے اپنی فیس بک وال پر والدہ کے نام ایک نظم بھی تحریر کی تھی جس میں لکھا تھا ’’وہ ہمیشہ یہاں موجود ہیں اور ہمیشہ ہمارے درمیان موجود رہیں گی‘‘۔ اُس نے دیگر پوسٹوں میں والدہ کی موت کا ذکرغمزدہ انداز میں کیا تھا۔

مزید پڑھیں: ’’ استنبول نائٹ کلب حملہ: داعش نے ذمہ داری قبول کرلی ‘‘

خیال رہے سال نو کی آمد کے موقع پر ترقی کے نائٹ کلب میں اسلامی شدت پسند تنظیم کے مسلح افراد نے حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں 39 افراد جاں بحق جبکہ 69 زخمی ہوئے تھے، اس حملے کی ذمہ داری داعش نے قبول کی اور حملہ آور کی ویڈیو بھی جاری کی تھی۔ نائٹ کلب مہلوکین حملے میں سات سعودی اور تین لبنانی شہریوں سمیت سترہ غیر ملکی جاں ہوئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top