لیبین طیارے کے ہائی جیکرزنے گرفتاری دے دی ARYNews.tv
The news is by your side.

Advertisement

لیبین طیارے کے ہائی جیکرزنے گرفتاری دے دی

مالٹا: لیبیا کے طیارے کو ہائی جیک کرنے والے اغوا کاروں نے ہتھیار ڈال دیے اور گرفتاری دے دی، مالٹا کے وزیراعظم نے ہائی جیکرز کو گرفتار کرنے کی تصدیق کردی.

تفصیلات کے مطابق نامعلوم ہائی جیکرز نے لیبیا میں ڈومیسٹک سطح پر چلنے والے طیارے اغوا کیا تھا،لبنان کی سرکاری ایئر لائن افریقیہ ایئر ویز نے ایئر بس اے 320 کے اغوا کی تصدیق کی۔

مالٹا کے ذرائع ابلاغ کے مطابق ایئر بس اے 320 لیبیا میں اندرون ملک کے لیے محو پرواز تھی جس میں 118 مسافر سوار تھے، اس کا رخ زبردستی مالٹا کی جانب موڑ دیا گیا، تھوڑی دیر بعد ایئر لائن حکام نے طیارے کے اغوا کی تصدیق کردی۔

ابتدائی رپورٹس کے مطابق طیارے میں 2 مسلح افراد موجود تھے جنہوں نے جہاز کو بم سے اڑانے کی دھمکی دی بعدازاں طیارہ مالٹا لے گئے اور وہاں خواتین اور بچوں کو رہا کردیا تاہم عملے کو یرغمال بنالیا۔

اطلاعات سامنے آئیں کہ ہائی جیکرز نے عملے کے عوض لیبیا کے سابق صدر معمر قذافی کے بیٹے کی رہائی کا مطالبہ کیا۔

اس ضمن میں مالٹا کے سیکیورٹی اداروں کو صدر کے حکم پر ہائی الرٹ اور کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیار کردیا گیا تھا۔

مالٹا کے ایئرپورٹ پر پریشان کن صورتحال کے باعث وہاں آنے والی پروازوں کو فی الحال قریبی اطالوی جزیرے سسلی کی جانب موڑنے کی ہدایت بھی دی گئیں۔

اغوا کے چند گھنٹوں بعد اب مالٹا ایئرپورٹ پر فضائی آپریشن بحال کردیا گیا تھا۔

مالٹا کے وزیراعظم نے کہا ہے کہ ہائی جیکرز نے تمام مسافروں کو نہیں صرف خواتین اور بچوں کو رہا کیا ہے۔

بعدازاں اچانک اطلاعات آئیں کہ ہائی جیکرز نے ہتھیار ڈال دیے اور مالٹا کے سیکیورٹی اداروں کو گرفتاری دے دی جس کی مالٹا کے وزیراعظم نے ہائی جیکرز کو گرفتار کرنے کی تصدیق کردی۔

واضح رہے کہ رواں سال مصر سے اندرون ملک جانے والے مصری ایئر لائن کے ایک اور طیارے کو بھی اغوا کر کے قبرص لے جایا گیا تھا تاہم بعد ازاں اغوا کار ایک نفسیاتی مریض نکلا جو اپنی بیوی سے ملاقات کا خواہش مند تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں