The news is by your side.

Advertisement

لنک روڈ زیادتی کیس، متاثرہ خاتون نے اپنا بیان قلمبند کروادیا

لاہور: لنک روڈ زیادتی کیس میں متاثرہ خاتون نے عدالت میں اپنا بیان قلمبند کروادیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق عدالت میں متاثرہ خاتون کے تین کمسن بچوں کو بھی پیش کیا گیا، عدالت نے بچوں کے کم عمر ہونے پر بیان ریکارڈ نہ کرنے کا حکم دیا۔

متاثرہ خاتون نے مکمل واقعے سے متعلق اپنا بیان ریکارڈ کروایا، خاتون نے کمرہ عدالت میں ملزم عابد ملہی، شفقت عرف بگا کی شناخت کی، متاثرہ خاتون نے ملزمان کی شناخت جیل میں جاکر بھی کی۔

دوسری جانب عدالت نے انسپکٹر محمد سلیم کا بیان بھی قلمبند کرلیا، ملزمان عابد ملہی اور شفقت بگا کا ڈی این اے لینے والے کا بھی بیان ریکارڈ کیا گیا۔

انسداد دہشت گردی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ نے جیل میں سماعت کی، اسپیشل پراسیکیوٹر عابد بھٹی، حافظ اصغر، عبدالجبار نے بیانات ریکارڈ کرائے۔

مزید پڑھیں: لنک روڈ زیادتی کیس: شریک ملزم شفقت کو 164 کا بیان قلمبند کرانے کی اجازت

واضح رہے کہ مجسٹریٹ کینٹ محمد علی، انسپکٹر محمد وسیم کے بیان قلمبند اور جرح مکمل ہوچکی ہے، کیس میں 34 گواہوں کے بیانات قلمبند کیے جاچکے ہیں۔

یاد رہے کہ 9 ستمبر کو ملزم شفقت نے عابد علی سے مل کر گجرپورہ میں خاتون سے دوران ڈکیتی زیادتی کی تھی، جس کے بعد پولیس نے شفقت کو گرفتار کیا، دوران تفتیش شفقت نے خاتون سے زیادتی کا اعتراف کرتے ہوئے بیان میں کہا تھا کہ 9 ستمبر کو وہ اور عابد ڈکیتی کی غرض سے کار کے پاس گئے تھے، پہلے خاتون سے لوٹ مار کی، اور پھر زیادتی کا نشانہ بنایا۔

مرکزی ملزم عابد ملہی کو واقعہ کے ایک ماہ بعد پولیس نے خود گرفتار کرنے کا دعوی کیا تھا جبکہ ملزم شفقت علی کو دیپالپور سے گرفتار کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں