The news is by your side.

Advertisement

موٹروے زیادتی کیس، عدالت نے ملزمان کو سزائے موت سنادی

لاہور  کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے لنک روڈ زیادتی کیس کے ملزمان کو موت کی سزا سنا دی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق کوٹ لکھپت  جیل میں انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج نے جمعرات کو محفوظ ہونے والا کیس کا فیصلہ پڑھ کر سنایا۔

پولیس نے فیصلے سے قبل ملزمان عابد مہی اور شفقت بگا کو سخت سیکیورٹی میں خصوصی کمرہ عدالت میں پہنچایا جبکہ پراسیکیوشن ٹیم اور ملزمان کے وکلا بھی کمرۂ عدالت پہنچے۔

 انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ نے گواہان کے بیانات مکمل ہونے اور جراح کے بعد جمعرات کے روز کیس کا فیصلہ محفوظ کیا جسے آج جاری کیا گیا۔

عدالتی فیصلے کے مطابق ملزمان کے اعتراف کے بعد انہیں زیادتی کے جرم میں سزائے موت جبکہ ڈکیتی کے جرم میں 14 ، 14 سال قید کی سزا سنائی گئی۔ ملزمان کو یہ حق بھی دیا گیا ہے کہ وہ اس سزا کے خلاف ہائی کورٹ میں درخواست دائر کرسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ ملزم عابد ملہی اور شفقت علی نے 8 اور 9 ستمبر کی رات  گجر پورہ کے قریب بچوں کے سامنے ماں کو تشدد کے بعد زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

خاتون اپنے دو بچوں کے ساتھ لاہور سے گوجروانولہ جارہی تھیں کہ گجرپورہ لنک روڈ کے قریب  گاڑی میں پیٹرول ختم ہوگیا تھا جس کی وجہ سے انہوں نے لنک روڈ ہائی وے پر گاڑی کھڑی کی تو اسی دوران ملزمان نے گاڑی پر دھاوا بولا تھا۔

بعد ازاں پولیس نے ملزم شفقت علی کو14 ستمبر،عابدملہی کو 12 اکتوبرکو گرفتارکیا، جس کے بعد دونوں نے تفتیش کے دوران اپنے جرم کا اعتراف کیا اور متاثرہ خاتون نے بھی مجسٹریٹ کے سامنے دونوں ملزمان کی شناخت کی تھی۔

پراسیکیوشن کی جانب سے مقدمے میں 37 گواہ پیش کیے گئے،کیس حساس ہونے کی وجہ سے مقدمے کا ٹرائل انسداد دہشت گردی کی عدالت نے جیل میں ہی کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں