The news is by your side.

Advertisement

لوڈ شیڈنگ سے پریشان شہری نے موبائل چارجنگ اور مسالحہ پیسنے کا زبردست حل نکال لیا

کرناٹک: بھارت میں لوڈ شیڈنگ سے پریشان ایک شہری نے موبائل چارجنگ اور مسالحہ پیسنے کا زبردست حل نکال لیا، شہری نے بجلی کے دفتر میں چارجنگ اور مسالحہ پیسنا شروع کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کرناٹک میں حکام کی جانب سے بجلی کی فراہمی میں ناکامی کے بعد ایک شہری ہنومنتھپا نے اپنا مسئلہ یوں حل کر لیا ہے کہ موبائل فون چارجنگ اور مسالحہ پیسنے کے لیے وہ بجلی کے دفتر پہنچ جاتا ہے۔

خیال رہے کہ بھارتی ریاست کرناٹک میں بھی کئی کئی گھنٹے بجلی کی لود شیڈنگ کوئی نئی بات نہیں رہی ہے، لوڈ شیڈنگ سے پریشان ہنومنتھپا تقریباً ہر روز بجلی فراہمی کے دفتر پہنچ جاتا ہے۔

شیوموگا ضلع کے منگوٹے گاؤں کا رہنے والا ہنومنتھپا روزانہ بجلی کے دفتر کے قریب ایک مِکسی، ایک جار اور دو سیل فون چارجرز کے ساتھ نظر آتا ہے، وہ دفتر میں مسالحہ پیسنے کے لیے مکسی کا استعمال کرتا ہے، اپنے تمام فون چارج کرتا ہے اور دن کی روشنی میں دفتر میں بجلی سے متعلق تمام متفرق کام کرت کے گھر کی راہ لے لیتا ہے۔

دل چسپ بات ہے کہ بجلی کے دفتر کا عملہ شہری کو نہیں ٹوکتا، نہ ہی کوئی اعتراض کرتا ہے۔

شہری کا یہ معمول 10 مہینے پہلے شروع ہوا تھا، جب ہنومنتھپا نے بجلی نہ ملنے کی شکایات درج کرائی تھیں، اس کے گھر پر دن میں صرف 3 سے 4 گھنٹے بجلی ملتی تھی، کئی مہینوں کے فالو اپ اور جھگڑوں کے بعد بھی اس کے حق میں کچھ نہیں ہوا، تو اس نے تنگ آکر میسکام کے ایک سینئر افسر کو فون کیا۔

شہری کا کہنا ہے کہ سینئر افسر نے غصے میں ان سے کہا کہ وہ اپنے کام دفتر آ کر کر لے، اور تب سے وہ اس پر عمل کر رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں