The news is by your side.

Advertisement

بجلی کی لوڈ شیڈنگ 2018 تک بھی ختم نہیں ہو سکتی، خواجہ آصف

اسلام آباد : وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف نے کہا ہے کہ لوڈ شیڈنگ کا ختم ہونا2018میں بھی ممکن نہیں۔ یہ بات انہوں نے قومی اسمبلی میں تحریری جواب میں بتائی۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں دیئے گئے بیان میں وفاقی وزیر پانی و بجلی نے وزیراعظم کے اعلانات کا پول کھول دیا.

ان کا کہنا تھا کہ کوئی بھی خود مختار کمپنی سو فیصد بجلی پیدا نہیں کررہی ہے۔ انہوں نے ملک بھر میں لوڈ شیدنگ کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ شہری اور دیہی علاقوں میں آٹھ گھنٹے لوڈ شیڈنگ ہورہی ہے جبکہ صنعتی علاقوں میں لوڈ شیدنگ نہیں ہورہی۔

انہوں نے بجلی بحران 2018 ء تک ختم کرنے کے سوال کے جواب میں کہا کہ یہ بالکل ناممکن نظر آرہا ہے کہ حکومت 2018 ء تک بجلی بحران پر قابو پالے گی۔

یاد رہے کہ بجلی اور گیس کی بد ترین لوڈ شیڈنگ سے شہری دہرے عذاب میں مبتلا ہیں، پانی بھی بجلی آنے پر ملتا ہے حکو مت عوام کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے میں نا کام ہو چکی ہےایسے میں وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف نے ایک اور بم گرا دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں