The news is by your side.

Advertisement

وزیر اعظم کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، کراچی میں لوڈ شیڈنگ عروج پر

کراچی: وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی جانب سے شہر قائد میں بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ پر کے الیکٹرک کو بجلی کی فراہمی کی ہدایت بے سود ثابت ہوئی، کراچی میں لوڈ شیڈنگ بدستور پرقرار ہے۔

تفصیلات کے مطابق شہر قائد میں بجلی کا شاٹ فال اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے اور معمولات زندگی بھی متاثر ہوچکی ہے، جبکہ وزیر اعظم کی جانب سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے دعوے بھی دھرے کے دھرے رہ گئے۔

گورنر سندھ محمد زبیر ہوں یا وزیر اعظم کے الیکٹرک کسی کے احکامات بھی خاطر میں نہ لائی اور شاہد خاقان عباسی کا وعدہ بھی ہوا میں اڑا دیا کیوں کہ کراچی کے کئی علاقوں میں لوڈشیڈنگ اب بھی عروج پر ہے۔

شہر میں بجلی کا بحران: وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کراچی پہنچ گئے

خیال رہے کہ گذشتہ دنوں شاہد خاقان عباسی کی جانب سے سوئی سدرن گیس کمپنی کو ہدایت کی گئی تھی کہ وہ کے الیکٹرک کو اس کی ضرورت کے مطابق گیس مہیا کرے اور کے الیکٹرک کو احکامات جاری کیے گئے تھے کہ وہ شہر میں بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ پر فوری قابو پائے۔

خیال رہے کہ موسم گرما کے آغاز سے ہی شہر کراچی میں بجلی کا بحران عروج پر پہنچ گیا ہے اور پورے شہر میں کئی کئی گھنٹوں کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ جاری ہے۔

نیشنل پاور اینڈ ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے کراچی میں بجلی کے بحران کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے اس کا ذمہ دار کے الیکٹرک کو ٹھہرایا ہے۔

سوئی سدرن گیس کمپنی نے کے الیکٹرک کو گیس سپلائی بحال کردی

اپنی جاری کردہ رپورٹ میں نیپرا کا مؤقف تھا کہ گیس نہیں ہے تو کے الیکٹرک فرنس آئل سے بجلی کیوں نہیں بنارہی؟ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کے الیکٹرک کورنگی کمبائنڈ پلانٹ اور بن قاسم پلانٹ دو متبال فیول سے چلائے تو لوڈشیڈنگ میں کمی آسکتی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں